تعلیمی بورڈز میں ناظم امتحانات و سیکریٹریز کی تعیناتی پر مزید پیچیدگیاں

صوبائی حکومت نے سندھ اعلیٰ تعلیمی کمیشن کے سیکریٹری ریاض الدین کوناقص کارکردگی پرعہدے سے فارغ کردیا، ان کی جگہ پرووینشل الیکشن اتھارٹی کے چیئرمین محمد حسین سید کوسیکریٹری سندھ ایچ ای سی تعینات کردیا گیا ہے۔

چیف سیکریٹری سندھ ممتاز علی شاہ کی جانب سے تبادلے کانوٹیفکیشن جاری کردیا۔ نوٹیفکیشن کے مطابق سندھ ایچ ای سی کے عہدے سے ہٹائے گئے سیکریٹری محمد ریاض الدین کے پاس اب صرف سیکریٹری یونیورسٹیزاینڈبورڈزکااضافی چارج رہے گا جبکہ محمد حسین سید چیئرمین صوبائی الیکشن اتھارٹی کااضافی چارج اپنے پاس ہی رکھیں گے۔

واضح رہے کہ گزشتہ چندسال میں یہ مثال پہلی بارسامنے آئی ہے کہ سیکریٹری یونیورسٹیزاینڈبورڈزکے پاس سیکریٹری ایچ ای سی کاچارج نہ ہویاسیکریٹری یونیورسٹیز اینڈ بورڈزسے سیکریٹری سندھ ایچ ای سی کاچارج واپس لے لیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل سابق سیکریٹریزنوید شیخ،محمد حسین سید ،قاضی کبیر اورعالیہ شاہدکے پاس سیکریٹری یونیورسٹیزاینڈبورڈزکے ساتھ ساتھ سندھ ایچ ای سی کے سیکریٹری کاچارج بھی رہااوران سیکریٹریزکے تبادلے تک دونوں اداروں یامحکموں کے چارج مذکورہ افسران کے پاس ہی رہے تاہم یہ پہلی مثال ہے جب کسی سیکریٹری یونیورسٹیزاینڈبورڈزسے سندھ ایچ ای سی کاچارج واپس لے لیا گیا ہو۔

ادھریہ بھی بتایاجارہاہے کہ مشیروزیراعلیٰ سندھ برائے یونیورسٹیز اینڈ بورڈز نثار کھوڑو بھی سیکریٹری ریاض الدین کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہیں اورمذکورہ پوسٹ سے بھی ان کے تبادلے کے امکانات ہیں۔

حال ہی میں تعلیمی بورڈزکے سیکریٹریزکے ٹیسٹ اورانٹرویوزکے بعد ان کی تقرری کے نوٹیفکیشن کے اجرا کے باوجودان افسران کی تعیناتی نہ ہونے کے سبب سیکریٹری ریاض الدین ہدف تنقید بنے ہوئے ہیں کیونکہ انھوں نے سیکریٹری تعلیمی بورڈزکی تعیناتی کانوٹیفکیشن ایک ایسے وقت میں جاری کیاجب محض دوروزکے بعد عدالت میں یہ معاملہ پیش ہوناتھا جس کے سبب نوٹیفکیشن جاری ہونے کے باوجود متعلقہ تعلیمی بورڈزکے سیکریٹریز اپنے عہدوں کاچارج نہیں لے سکے اورسندھ کے تعلیمی بورڈزمیں ناظم امتحانات اورسیکریٹریزکی تعیناتی کامسئلہ حل ہونے کے بجائے مزیدپیچیدگی اختیارکرگیا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *