اتوار, فروری 18, 2024
ہومتازہ ترینجامعہ کراچی: اسکول آف لاء کی نئی عمارت کا بدست ڈاکٹر سیدنا...

جامعہ کراچی: اسکول آف لاء کی نئی عمارت کا بدست ڈاکٹر سیدنا مفضل سیف الدین افتتاح

نگراں وزیراعلیٰ سندھ جسٹس(ر) مقبول باقر نے کہا کہ داؤدی بوہرہ کمیونٹی کی سماجی خدمات سرحدوں اور قومیتوں سے بالاترہیں،جامعہ کراچی میں اسکول آف لاء کی عمارت تعمیر کرکے دینا بوہرہ جماعت کی جانب سے تعلیمی میدان میں اہم شراکت کی نشاندہی ہے۔

سیدنا مفضل سیف الدین کے دورہ کراچی کے موقع پر یہ افتتاح طلباء اور قوم کے لیے ایک قیمتی تحفہ اور ایک قابل احترام رہنما سیدنا مفضل سیف الدین کے نام سے منسوب عمارت ایک فن تعمیر ہے۔ یہ جدید ترین سہولت علمی فضیلت کے عزم کی علامت اورعالمی انسانی ترقی کو فروغ دینے میں داؤدی بوہرہ جماعت کے وسیع تر وژن کی عکاسی بھی ہے۔فکری ترقی اور تعلیمی فروغ کیلئے سیدنامفضل سیف الدین کی لگن قابل ستائش اوریہ تعلیمی ترقی بلاشبہ ہماری نسلوں پر دیرپا اثر چھوڑے گی۔ میں سندھ میں تعلیمی ترقی کے لئے بوہرہ کمیونٹی کا شکرگزارہوں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے بوہرہ برادری کی جانب سے جامعہ کراچی میں سیدنا مفضل سیف الدین کے نام سے منسوب عمارت سیدنامفضل سیف الدین اسکول آف لاء(کلیہ قانون) کی تعمیر کرکے دی جانے والی نئی عمارت کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔عمارت کا افتتاح داؤدی بوہرہ کمیونٹی کے روحانی پیشوا سیدنا مفضل سیف الدین نے کیا۔

اس موقع پرسابق وزیر اعلیٰ سندھ سید مرادعلی شاہ،چانسلر وگورنرسندھ محمد کامران خان ٹیسوری،میئر کراچی مرتضیٰ وہاب،وائس چانسلر جامعہ کراچی پروفیسرڈاکٹر خالد محمودعراقی،سیکریٹری بورڈز اینڈ یونیورسٹیز،ممبرسینیٹ وسنڈیکیٹ،روئسائے کلیہ جات،صدورشعبہ جات اور عمائدین شہرکی کثیر تعداد موجود تھی۔

گورنرسندھ محمد کامران خان ٹیسوری نے کہا کہ بوہری جماعت پاکستان کی سب سے پرامن کمیونٹی میں سرفہرست ہے،مشکل حالات ہونے کے باوجود بھی اس جماعت نے اپنی معاشی سرگرمیوں کو جاری رکھاجوکہ آسان کام نہیں۔معاشی سرگرمیوں اور پاکستان کی تعمیر،ترقی وخوشحالی میں بوہری جماعت نے بہت اہم کردار اداکیاہے۔بوہرہ کمیونٹی نے شہر قائد میں معاشی سرگرمیوں کے فروغ سمیت فلاحی کاموں میں بھی بڑھ چڑھ کرحصہ لیاہے اور ٹیکس نیٹ بڑھانے میں بھی ان کا کلیدی کردار ہے۔میں جامعہ کراچی میں اسکول آف لاء (کلیہ قانون)کے لئے عمارت تعمیر کرنے پر سیدنامفضل سیف الدین کا مشکور ہوں اور امید کرتاہوں کہ عصرحاضر کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ اس عمارت میں قانون کی تعلیم حاصل کرنے والے اپنے شعبہ میں کارہائے نمایاں انجام دیں گے۔

جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر خالد محمودعراقی نے کہا کہ ڈاکٹر سیدنا مفضل سیف الدین کی خدمات کی دنیا معترف ہے، آج بوہرہ برادری نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں اپنی سماجی اور تعلیمی خدمات کی وجہ سے پہچانی جاتی ہے۔ سیدنا مفضل سیف الدین کی قیادت میں بوہرہ برادری نے اپنے بزرگوں کی روایات اور تہذیب کو پھلنے پھولنے کا جو ماحول عطا کیا ہے وہ لائق تحسین اور قابل تقلید ہے۔ سیدنا مفضل سیف الدین کی تعلیم اورصحت کے شعبہ میں گراں قدرخدمات ہیں اور جامعہ کراچی میں داؤدی بوہرہ جماعت کی جانب سے تعمیرکیاجانے والا شعبہ جینیات اور فیکلٹی آف لاء اسی سلسلے کی ایک کڑی اور بہترین مثال ہے۔ڈاکٹر خالد عراقی نے مزید کہا کہ میں امید کرتاہوں کہ جامعہ کراچی میں دیگر شعبہ جات کی عصرحاضر کے جدیدتقاضوں کے مطابق تعمیر میں داؤدی بوہرہ جماعت ہمیشہ کی طرح کلیدی کرداراداکرے گی۔

ڈاکٹر خالد عراقی نے کہا کہ سیدنا مفضل سیف الدین نے اپنے والد محترم سیدنا برہان الدین کے نقشے قدم پر چلتے ہوئے ثقافتی اور سماجی و اقتصادی ترقی پر خصوصی زور دیتے ہوئے اپنی زندگی برادری کی خدمت اور بڑے پیمانے پر معاشرے کی بہتری کے لیے وقف کر رکھی ہے۔ عصرحاضر میں سیدنامفضل سیف الدین طبی دیکھ بھال کی جدید ترین سہولیات فراہم کرنے کے لیے تیزی سے وسائل وقف کئے جارہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

مقبول ترین

متعلقہ خبریں