Home پاکستان جے ایس ایم یو نے 500 سے زائد فارغ التحصیل طلباء کو...

جے ایس ایم یو نے 500 سے زائد فارغ التحصیل طلباء کو ڈگری تفویض کر دیں

0
46

کراچی : جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی نے شہر کے معروف ہوٹل میں اپنا پانچواں کانووکیشن منعقد کیا جس میں 500 سے زائد کامیاب گریجویٹس کو ڈگریاں دی گئیں۔ 23-2022 بیچ کے بہترین گریجویٹس اور پوزیشن ہولڈرز کو ستائیس میڈلز دیے گئے جن میں سے طالبات نے 25 میڈلز حاصل کیے۔ ایم بی بی ایس کی طالبہ عروج فاطمہ نے اپنی غیر معمولی کارکردگی پر تین تمغے حاصل کیے۔

پوزیشن ہولڈرز میں میڈلز تقسیم کرنے کے بعد کانووکیشن کے مہمان خصوصی گورنرسندھ جناب کامران خان ٹیسوری نے فارغ التحصیل طلباء اور انکے والدین کو مبارکباد دی اور ان کی کامیابیوں میں والدین اور اساتذہ کے اہم کردار کو سراہا۔ انہوں نے JSMU کی ایک معروف میڈیکل یونیورسٹی کے طور پر تعریف کی، جو نوجوانوں کو سستی قیمت پر معیاری تعلیم حاصل کرنے کے قابل رسائی مواقع فراہم کرتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا، ‘نرسنگ صحت کی دیکھ بھال کے نظام کا ایک لازمی حصہ ہے۔ نرسنگ گریجویٹس کے پہلے بیچ کا پاس ہونا صحت کی دیکھ بھال کے شعبے کے بدلتے ہوئے مطالبات کو پورا کرنے کے لیے JSMU کی لگن اور محنت کو واضح کرتا ہے۔’ بحیثیت چانسلر انہوں نے امید ظاہر کی کہ یونیورسٹی کیمپس میں طب کے شعبے میں بہترین کارکردگی اور اخلاقی اقدار کے فروغ کی کوششیں مستقبل میں بھی بھرپور طریقے سے جاری رہیں گی۔

گورنر سن کامران خان ٹیسوری نے پوزیشن حاصل کرنے والےگریجویٹس کو میڈلز دیے۔ اپنی تقریر میں انہوں نے گریجویٹس سے کہا کہ وہ اپنی مادر وطن کے ساتھ سچے رہیں اور جذبہ انسانیت کی خدمت کریں۔

کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے جے ایس ایم یو کے وائس چانسلر پروفیسر امجد سراج میمن نے حالیہ برسوں میں یونیورسٹی کے حاصل کردہ سنگ میلوں پر روشنی ڈالی اور بتایا کہ JSMU صوبہ سندھ میں جدید اور متعلقہ صحت کی تعلیم فراہم کرنے کے لیے پائیدار حکمت عملیوں اور پروگراموں پر کام کر رہی ہے۔

انہوں نے ان مختلف منصوبوں کے بارے میں مزید بتایا جن پر JSMU اس وقت کام کر رہی ہے، ان منصوبوں میں اسکول آف نرسنگ اینڈ مڈوائفری کے لیے SESSI کے ولیکا اسپتال کا حصول، لانڈھی کیمپس میں دل کے امراض سے بچاؤ کے حفاظتی کلینک کا قیام، اور انٹرنیشنل میڈیکل کالج کی اجازت کا حصول شامل ہیں۔ انہوں نے ہاسٹلز سمیت موجودہ سہولیات کی توسیع کے لیے یونیورسٹی کو جگہ کی ضرورت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے جے ایس ایم یو کے بجٹ کے خسارے کو ختم کرنے کے لیے اٹھائے گئے کامیاب اقدامات کا بھی تذکرہ کیا۔

تقریب سے کانووکیشن کمیٹی کی چیئرپرسن پروفیسر ہما علی نے بھی خطاب کیا۔ تقریب حلف برداری رجسٹرار ڈاکٹر اعظم خان نے کی۔ سال23-2022 کے لیے عروج فاطمہ ایم بی بی ایس۔ سعدیہ خلیل بی ڈی ایس، ہدی ضمیر، فارم ڈی، ماہم بانو (BSN)، میدا اظہر (MSPH)، شہزادی خوش بخت وسیم (BBA) اور ایمن مختار(BBA-HCM) بیسٹ گریجویٹس قرار پائیں۔

پہلی پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء، عروج فاطمہ (ایم بی بی ایس)، ایمن اظہر (بی ڈی ایس)، نمرہ رسول (بی ڈی ایس بیسک سائنس)، ماہم بانو (بی ایس این)، ماہین اقبال (بی بی اے ایچ سی ایم)، شہزادی خوش بخت وسیم (بی بی اے آنرز) اور عارفین (فارم ڈی) کو گولڈ میڈل سے نوازا گیا۔ جبکہ دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے پر کانسی اور چاندی کے تمغے بھی دیئے گئے۔ ایم بی بی ایس، بی ڈی ایس، بی ایس این، اور فارم ڈی میں چوتھی سے دسویں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ میں اسناد تقسیم کی گئیں۔

کانوکیشن میں بیچلرز کے علاؤہ ماسٹرز پروگرامز بشمول ایم بی اے ، ایم ایس پی ایچ اور ایم ایچ پی ای کے گریجویٹس کوبھی ڈگریاں تفویض کی گئیں۔ کانووکیشن JSMU کے فیکلٹی اور اسٹاف اور والدین نے شرکت کی۔

پرو وائس چانسلر پروفیسر سعدیہ اکرم نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ پروگرام کے دوران، گریجویٹ طلباء، وائس چانسلر، رجسٹرار، اور تمام شعبہ جات کے سربراہوں کے پیغامات کے ساتھ ساتھ JSMU طلباء کی کیمپس لائف کی نمائش کرنے والی دستاویزی فلم اور سلائیڈ شوز بھی دکھائے گئے۔