ایم کیو ایم کے سابق رہنما علی رضا عابدی حلمے جابحق ہو گئے .

کراچی: ڈیفنس میں نامعلوم ملزمان کی فائرنگ سے متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے سابق رہنما سید علی رضا عابدی جاں بحق ہو گئے۔ڈی آئی جی ساوتھ جاوید عالم نے سابق رکن قومی اسمبلی کی ہلاکت کی تصدیق کی۔

ڈیفنس خیابان اتحاد میں موٹر سائیکل پر سوار نامعلوم مسلح افراد نے گھر کے قریب گاڑی میں موجود سید علی رضا عابدی پر حملہ کیا۔
علی رضا عابدی کو زخمی حالت میں پی این ایس شفا منتقل کیا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاسکے اور خالق حقیقی سے جاملے۔محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کے راجا عمر خطاب نے بتایا کہ موٹرسائیکل پر دو مسلح حملہ آوار آئے اور 10 سیکنڈ میں کارروائی کرکے فرار ہو گئے۔انہوں نے بتایا کہ ’حملہ آوار ترتیت یافتہ تھے اور دونوں نے کیپ پہنے ہوئے تھے، حملہ آوار مرحوم سید رضا علی عابدی کی گاڑی کا پیچھا کرتے ہوئےپہنچے تھے۔

علی رضا عابدی نے 5 بج کر 57 منٹ پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی پریس کانفرنس سے متعلق ٹوئٹ کیا تھا کہ ’تحریک انصاف کی جانب سے ردعمل پر مبنی پریس کانفرنس میں تمام باتیں محض دوہرائی گئیں جو وہ گزشتہ 5 برس سے کنٹینرز پر کھڑے ہوکر کر رہی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ’مسلم لیگ (ن) کی پریس کانفرنس کے ردعمل میں پی ٹی آئی کی جانب سے کچھ ٹھوس چیزیں پیش نہیں کی گئیں سوائے اس کے کہ پی ٹی آئی باقاعدہ نیب عدالت کی جگہ باتیں کر رہی ہے۔

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی کی قاتلانہ حملے میں ہلاکت کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی سندھ سے رپورٹ طلب کرلی۔سندھ انسپکٹر جنرل آف پولیس (آئی جی پی) ڈاکٹر سید کلیم امام نے بھی واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ افسران سے رپورٹ طلب کرلی۔خیال رہے سید علی رضا عابدی نے 2 ستمبر کو ذاتی وجوہات کی وجہ سے پارٹی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا تھا۔انہوں نے 17 اگست کو عمران خان کے وزیر اعظم منتخب ہونے پر ٹوئٹ کیا تھا کہ ’پی ٹی آئی کو 176 ووٹ مبارک ہو، 7 ووٹوں پر ایم کیو ایم کا شکریہ ادا کریں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘172 ووٹ درکار تھے اب یہ احسان نہیں بھولنا’۔

وزیراعظم عمران خان نے سید علی رضا عابدی کی وفات پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے (متعلقہ حکام) سے رپورٹ طلب کرلی۔جب کہ متحدہ قومی مومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے سابق کنوینر و رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا ہے کہ ’کراچی کے سپوتوں کی ہلاکت کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔علی رضا عابدی کے گھر کے باہر میڈیا نمائندوں سے آبدیدہ آنکھوں اور غمزدہ لہجے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ’جس بے دردی اور سفاکی کے ساتھ سید علی رضا کو قتل کیا گیا یہ خالصتاً دہشت گردی ہے۔انہوں نے کہا کہ سید علی رضا عابدی میرے بچوں کی طرح تھے، وہ پاکستان کے مستقبل اور بیٹے تھے، ان کی سیکیورٹی کا خیال کیوں نہیں کیا گیا، جبکہ قاتل دندناتے پھر رہے ہیں جس کا وفاقی و صوبائی حکومتوں کو نوٹس لینا چاہیے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *