ماتلی کے29 ہندو خاندانوں کے 206 افراد نے اسلام قبول کرلیا .

اسلام قبول کرنے والوں میں36 مرد، 43 عورتیں،51 بچیاں ، 76 لڑکے شامل ہیں .بنوریہ اور سایانی ویلفیئر کے اشتراک سے منعقدہ تقریب میں شیخ الحدیث عبدالحمیدغوری نے کلمہ پڑھایا .اسلامی تعلیمات میں ہی بے چین روح کے قراروسکون کا رازموجودہے، مفتی محمدنعیم کا نومسلموں کو مبارکباد بھی دی .

ماتلی وگردونواح سے تعلق رکھنے والے29 ہندوخاندانوں کے206افرادنے اسلام قبول کرلیا،36مرد، 43عورتیں،51چھوٹی بچیوں ، 76لڑکوں سمیت 28خاندانوں کے 206افراد شامل ہیں، مقامی نمائندے نے ان خاندانوں کی جانب سے جامعہ بنوریہ عالمیہ سائٹ آکر قبول اسلام کی خواہش کا اظہار کیا جس پر ٹرانسپورٹ کا انتظام کرکے کراچی لایا گیا ،.

بانٹوا میمن کمیونٹی ہال میں جامعہ بنوریہ اور سایانی ویلفیئر کے اشتراک سے تقریب منعقد کی گئی جس میں جامعہ کے ناظم تعلیمات وشیخ الحدیث مولانا عبدالحمیدخان غوری نے کلمہ پڑھایااستقامت کیلئے خصوصی دعاکرائی ۔

تقریب میں جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس دارالافتاء مولانا سیف اللہ جمیل ، نومسلم فاونڈیشن جامعہ بنوریہ عالمیہ کے مولانا سیف اللہ ربانی ، مولانامفتی عبدالرحمن اور سایانی ویلفیئر ٹرسٹ کے عمران کاٹھیا، جامعہ بنوریہ عالمیہ کے دیگر اساتذہ علماء سمیت یگر شعبائے زندگی سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے شرکت کی.

علمائے کرام کی بڑی تعداد اس موقع پر شریک ہے

قبول اسلام پر تمام خاندانوں کو مہمانوں اور شرکاء نے مبارکباد پیش کی اورنومسلموں میں بھرپور امداد تقسیم کی گئی ۔ نومسلموں کا کہنا تھاکہ ہم نے اسلامی تعلیمات سے متاثر ہوکر اسلام قبول کیا کیونکہ جس مساوات انسانی کا درس اسلام دیتاہے اس کا دیگر مذاہب میں فقدان ہے اسلئے ہم اپنی خوشی سے اسلام قبول کررہے ہیں ۔

دریں اثناء جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے بڑی تعداد میں نومسلموں کا اسلام میں داخل ہونے پر خوشی کا اظہار کیا اور نومسلم خاندانوں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہاکہ اسلام دنیا کا واحد مذہب ہے جوشروع سے اپنی حقیقی شکل وصورت میں برقرارہے اورزندگی کے تمام شعبوں میں قیامت تک آنے والے انسانوں کی رہنمائی کرتاہے ۔

انہوں نے کہاکہ دنیابھراسلام اور مسلمانوں کیخلاف ہونے والے منفی پروپیگنڈوں کے باجودآئے روزسینکڑوں غیرمسلم اسلام قبول کررہے ،جن میں دنیاکے ہرمذہب ،ہرزبان اورہرعلاقے کے لوگ شامل ہورہے ہیں کیونکہ اسلام ایک آفاقی دین اوراسلامی تعلیمات میں ہی بے چین روح کے قراروسکون کا رازموجودہے .

نو مسلموں کو دی جانے والی اشیائے ضروریہ

یہی وجہ ہے کہ موجودہ دور کے مسلمانوں کاقول وفعل میں تضاداورکسی غیرمسلم کواسلام کی دعوت دینے کیلئے ناکافی ہے لیکن پھربھی آئے روزسیکڑوں افراداسلامی تعلیمات سے متاثرہوکر اسلام قبول کررہے ہیں جبکہ ہزارو ں دنیا و آخرت کی کامیابی کے حصول کیلئے اسلام کے دروازے پردستک دینے کیلئے تیارہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *