واٹر بورڈ‌ نے اپنی کالونیوں میں ملازمین کی رہائشوں کا گرانے کا پروگرام بنا لیا .

واٹر بورڈ کے افسران بغیر نوٹس دیئے کارسازکالونی میں آپریشن کرنے پہنچنے جہاں ملازمین و رہائشیوں کی بڑی تعداد نے مزاحمت کرکے آپریشن روک دیا جس کے بعد ایم ڈی آفس کے باہر احتجاج بھی کیا گیا .

اس حوالے سے پیپلز لیبر یونین کے جزل سیکریٹری محسن رضا نے کہا ہے کہ واٹربورڈ کے چند افسران عدالت عظمیٰ کے احکامات کے نام پر واٹربورڈ ملازمین کی قانونی اور سالہاسال سے آباد کالونیوں کو مسمار کرکے اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل چاہتے ہیں ،پیپلز لیبر یونین ان ہتھکنڈوں کو ہر صورت ناکام بنادے گی،واٹربورڈ کے محنت کشوں اور ان کو حاصل قانونی حقوق کا ہر صورت دفاع کیا جائے گا .

واٹربورڈ کے ڈی سول اور ڈائریکٹر انفورسمنٹ عملے سمیت بغیر کسی نوٹس اور قانونی احکامات کے نائنتھ مائلز کارساز پر قائم کالونیوں کے مکانات مسمار کرنے پہنچے جسے ملازمین واٹربورڈ نے اپنے اتحاد سے ناکام بنادیا،ہم اس کارروائی کی شدید مذمت کرتے ہیں اور انتظامیہ کو بتادینا چاہتے ہیں کہ واٹربورڈ کے محنت کش متحد ہیں وہ اپنے اتحاد سے ہر سازش کو ناکام بنادیں گے .

ان خیالات کا اظہار انہوں نے واٹربورڈ کے کارساز پر واقع ایم ڈی سیکریٹریٹ کے سامنے مظاہرہ کرنے والے سیکڑوں ملازمین اور ان کے اہل خانہ سے خطاب کررہے تھے ان کے ساتھ پیپلز لیبر یونین کے نائب صدر سید شہاب حسین جوائنٹ سیکریٹری خورشید مہدی ،رب نواز لغاری، حسنین اور امیر حسن ،حسن مرتضی سمیت دیگر عہدیداران بھی تھے .

محسن رضا نے کہا کہ واٹربورڈکے چند افسران غلط بیانی کرکے حقائق چھپانے کی کوشش کررہے ہیں اور اہم اداروں کو گمراہ کررہے ہیں ، دراصل یہ عناصر واٹربورڈ کی کالونیاں مسمار کرکے اراضی بلڈر مافیا کو فروخت کرنا چاہتے ہیں،انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نے پمپ ہاؤسز اور دیگر تنصیبات کی سیکڑوں ایکڑ اراضی قبضہ مافیا سے واگزار کرانے کے احکامات صادر کیئے تھے تاہم واٹربورڈ کے چند افسران اس کی آڑ میں قیام پاکستان سے قبل آباد واٹربورڈ ملازمین کی رہائشی کالونیوں کی قیمتی اراضی ہڑپنا چاہتے ہیں ان کے یہ عزائم کسی صورت پورے نہیں ہونے دیئے جائیں گے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *