سندھ کا بڑا تدریسی اسپتال شفا خانے کے بجائے مقتل گاہ بن گیا ،

الرٹ نیوز ،

صوبہ سندھ کا سب سے بڑا سرکاری تدریسی سول اسپتال کراچی انتظامی سربراہ کی نااہلی اور مجرمانہ غفلت کے باعث شفاء خانے کے بجائے مقتل بن گیا، ادویہ اور سرجیکل سامان نہ ہونے کے باعث غریب مریض باہر سے خود دوائیں خریدنے پر مجبور ہیں، جو مریض دوائیں اور مہنگے ٹیسٹ نہیں کرواسکتے وہ ایڑیاں رگڑ رگڑ کر اسپتال کے شعبہ حادثات میں بغیر علاج اور تشخیص کے موت کے منہ میں جارہے ہیں، ٹراما سینٹر اور شعبہ حادثات میں ہنگامی طبی امداد کے مریضوں کو طبی امداد فراہم کرنے کے بجائے پلنگ خالی نہ ہونے کا بہانہ کرکے نجی اسپتالوں میں جانے کا مشورہ دیا جا رہا ہے۔

ڈاکٹر رتھ کے ایم فاؤ سول اسپتال کے میڈیکل سپرنڈنٹ ڈاکٹر خادم حسین قریشی رواں مالی سال کی دو سہہ ماہی کے ادویہ اور سرجیکل کے ڈسپوزیبل سامان کی خریداری کیلئے مختص 42کروڑ روپے کی رقم خزانے میں موجود ہونے کے باعث دوسری سہہ ماہی ختم ہونے میں 12 روز رہ گئے ہیں انہوں نے ٹینڈر کے ذریعے تاحال ایک روپے کی خریداری نہیں کی ہے بلکہ حیرت انگیز طور پر وہ یومیہ کوٹیشن کے ذریعے 3 لاکھ روپے کی روز گلوکوز ڈرپس اور قریب المدت غیر معیاری ادویہ ساز اداروں کی نیلی پیلی دوائیں خرید کر رقم ضائع کررہے ہیں .

لیکن اسپتال کے اسٹور میں ایک بھی اینٹی بائیوٹک دوا کے علاوہ انسولین، شوگر جانچنے کی اسٹپ، گاز، کینولہ، ڈسپوزیبل سرنجز جان بچانے والے انجکشن، کینسر کے مریضوں کی خوراک کیلئے استعمال ہونے والا انشور، گلوسنا سمیت سرجری میں استعمال ہونے والا سامان، ریڈیالوجی ڈپارٹمنٹ میں استعمال ہونے والا کیمیکل وغیرہ جیسی اشیاء چار ماہ سے ختم ہوچکی ہیں۔

ایم ایس نے بغیر جواز کے گزشتہ سال دوا فراہم کرنے والی مختلف کمپنیوں کے 35 کروڑ روپے سے زائد کے واجب الادا بلز روکے ہوئے ہیں تو گزشتہ سال بجٹ کی مختص شدہ 24 کروڑ روپے کی رقم استعمال کے بغیر ضائع کردی ہے۔ اسپتال میں صفائی ستھرائی کرنے والی کمپنی سمیت نجی سیکورٹی گارڈ فراہم کرنے والی کمپنیوں کے لاکھوں روپے بلز ادا نہیں کئے ہیں .

چند مخصوص اور من پسند کنٹریکٹرز کے علاج اسپتال کو کروڑوں روپے کا مقروض کرنا اور بجٹ کی رقم استعمال نہ کرنا محکمہ صحت کے ایڈیشنل سیکریٹری مطابق یہ عملی غفلت مجرمانہ کے دائرہ اختیار میں آتا ہے .لیکن اس کے باوجود سابق سیکریٹری صحت فضل اللہ پیچوہو اپنے اور ڈاکٹر خادم حسین قریشی کے امریکہ میں مقیم مشترکہ دوست کی سفارش کی بناء پر وزیر صحت کو ایم ایس سول اسپتال کیخلاف کارروائی سے روکے ہوئے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *