لاک ڈاؤن میں توسیع تاجروں کے مسائل بڑھا دے گی : زاہد اعوان

اعتماد میں لیئے بغیر لاک ڈاؤن 30 اپریل تک بڑھانا تاجروں کے ساتھ ظلم ہے

الرٹ نیوز : حکومت کنسٹرکشن سیکٹر کے ساتھ دیگر شعبوں کیلئے بھی مراعات کا اعلان کرے اور غریبوں کیلئے حقیقی اقدامات کئیے جائیں ۔ لاک ڈاؤن کی وجہ سے چھوٹے کاروبار کرنیوالوں کے گھروں میں فاقے ہو رہے ہیں، مرکزی رہنماء تنظیم الاعوان پاکستان

تنظیم الاعوان پاکستان کے مرکزی رہنماء زاہد اعوان نے کہا ہے کہ حکومت نے تاجروں کو  اعتماد میں لیئے بغیر لاک ڈاؤن 30 اپریل تک بڑھا کر تاجروں کے مسائل مزید بڑھا دیئے ہیں ۔ وباء سے بچاؤ کیلئے اقدامات کا قدر نہیں لیکن غریبوں کی داد رسی بھی ضروری ہے ۔ تنظیم الاعوان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے زاہد اعوان نے کہا کہ کورونا کی وجہ سے پاکستان کی معیشت کا بھٹہ بیٹھ گیا ہے ۔

مذید پڑھیں : تاجروں کو ڈرایا دھمکایا جا رہا ہے : مفتی قاسم فخری

پورے ملک میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے تجارتی سرگرمیاں منجمد ہو چکی ہیں، کاروباری طبقے کے ساتھ تمام طبقات لاک ڈاؤن کی وجہ سے بری طرح متاثر ہوئے ہیں ۔ تمام صوبوں نے منصوبہ بندی کے بغیر لاک ڈاؤن کرکے غریبوں کو بھوک سے مرنے کیلئے چھوڑ دیا ہے ۔ وفاق کی جانب سے کنسٹرکشن سیکٹر کیلئے مراعات اور صنعت کا درجہ دیکر کام کی اجازت دینا ، خوش آئند اقدام ہے ۔ جس فیصلے سے لوگوں کو روزگارملے ہم ہراس فیصلے کی حمایت کریں گے ۔

تاہم حکومت لاک ڈاؤن کی وجہ سے متاثر ہونیوالے عوام کو امداد کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات کرے ۔ انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے چھوٹے کاروبار کرنیوالوں کے گھروں میں فاقے ہو رہے ہیں ۔ لوگوں کے پاس دکانوں اور گھروں کے کرائے دینے اور یوٹیلیٹی بلز کیلئے بھی پیسے نہیں ہیں ۔ رمضان کی آمد آمد ہے لیکن غریب عوام اور چھوٹے کاروباری کرنیوالوں کے گھروں میں بھوک رقص کر رہی ہے ۔ جب کہ وفاق اورصوبے کھینچا تانی میں لگے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تنظیم الاعوان غریب عوام کی داد رسی کیلئے مقدور بھر کوششیں کر رہی ہے ۔ تاہم حکومت بھی الزامات اور سیاسی پوائنٹ اسکورنگ سے نکل کر عوام کیلئے حقیقی اقدامات کرے تا کہ متاثرین کو ریلیف مل سکے۔

Show More

One Comment

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close