سلمان بٹ نے بغیر پرفارمنس کم بیک کو کرپشن قرار دیدیا

Pakistani Former Captain

پاکستان مینز کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سلمان بٹ نے بغیر پرفارمنس ٹیم کم بیک کرنے کو بھی ٹیم کرپشن قرار دے دیا.

ڈان اخبار میں شائع ایک مضمون مطابق سلمان بٹ نے یہ کہا تھا کہ سالمیت وہ چیز ہی نہیں‌ جس کے بارے میں‌ پاکستان کرکٹ میں بات ہونی چاہیے۔

سلمان بٹ نے کہا کہ میں ان کھلاڑیوں کو جانتا ہوں جو پاکستان کی ٹیم میں اپنے روابط کی وجہ سے شامل ہوئے ہیں، جبکہ کتنے ہی کھلاڑی ایسے ہیں جنہوں نے بامعنی پرفارمنس نہ ہوتے ہوئے بھی متعدد مرتبہ قومی ٹیم میں کم بیک کیا ہے۔

انہوں نے اپنی اس بات پر سوال اٹھایا کہ کیا یہ سب کچھ کسی کرپشن سے علیحدہ ہیں ؟

واضح رہے کہ پاکستان کرکٹ میں کرپشن سے متاثرہ کھلاڑی پریشانی کا شکار ہیں، جبکہ تجربہ کار محمد حفیظ کے بیان کے بعد ان میں غم و غصہ بھی پایا جارہا ہے۔

محمد حفیظ نے کہا تھا کہ ایسے کھلاڑی جنہوں نے جان بوجھ کر پاکستان کو بدنام کیا ہے انہیں سزا ملنے کے باوجود ٹیم میں شامل نہیں کیا جانا چاہیے۔

سلمان بٹ انگلینڈ میں 2010 میں سامنے آنے والے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کا حصہ تھے، جس کا انہوں نے برطانوی عدالت میں اعتراف بھی کیا۔

اعتراف جرم کے بعد انہیں اور ساتھی کرکٹر محمد عامر اور محمد آصف کو برطانوی عدالت نے سزائیں سنائیں۔

سلمان بٹ کا کہنا تھا کہ اگر پاکستانی کرکٹ سالمیت کی بات کریں تو کیا میرے پاس یہ اختیار ہونا چاہیے کہ میں اس کی سالمیت کی بات کروں، جبکہ میں نے ہی جان بوجھ کر اس کی سالمیت کو نقصان پہنچایا؟

دیگر کھلاڑیوں کے تبصرے پر بات کرتے ہوئے سلمان بٹ نے کہا کہ مجھے نہیں سمجھ آتا کہ کچھ کھلاڑی کرپشن زدہ کھلاڑیوں پر کیوں تبصرہ کرتے ہیں جبکہ یہ اختیار تو صرف پی سی بی اور آئی سی سی کے پاس ہے کیونکہ انہوں نے قوانین ترتیب دیے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *