ہنری کسینجر نے راز سے آخر کار پردہ اٹھا ہی دیا

بلاگ : علی ہلال

سابق امریکی وزیر خارجہ ہنری کسینجر نے کہا ہے کہ کورونا وائرس دنیا کے موجودہ نظام کی بساط لپیٹ کر رکھ دے گا ۔ وال اسٹریٹ جرنل میں اپنے کالم میں کسینجر نے لکھا ہے کہ امریکہ سمیت کوئی بھی ملک اس وائرس کی تباہ کاریوں اوراس کے نتیجے میں آنے والی تبدیلیوں سے بچ نہیں سکے گا ۔

کسینجر نے اہم بات یہ کہی ہے کہ جہاں تک وائرس کا انسانی جسم پر اثر ہے وہ قابو میں آ جائے گا لیکن دنیا اس وائرس کے سیاسی اور اقتصادی سطح پر مرتب کردہ اثرات سے محفوظ نہیں رہ سکے گی ۔ لہذا تمام ممالک کو ابھی سے خود کو اگلے نظام کے لئے تیار کرنے کی ضرورت ہے ۔

خیال رہے کہ ہنری کسینجر کو فری میسن کی لومڑی کہا جاتا ہے ۔ فری میسن کے بارے میں ویسے تو دنیا بھرمیں بہت سی طلسماتی نوعیت کی داستانیں مشہور ہیں لیکن حقیقت یہ ہے کہ ان میں سچ سے زیادہ جھوٹ اور مبالغہ آمیزی زیادہ ہے ۔ جس سے متاثر ہونے کی ہر گز ضرورت نہیں ہے ۔

البتہ تحقیقات سے یہ حقیقت آشکار ہوتی ہے کہ دنیا میں چند قوتیں ایسی ضرور ہیں ۔ جو عالمی سطح پر وقتا فوقتا بڑی تبدیلیاں رونما ہونے کے لئے فیصلے کرتی ہیں اورانہیں اقوام متحدہ اوراس جیسے دیگر عالمی اداروں کے ذریعے نافذ بھی کرواتی ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *