فتویٰ مراجع و فقہائے امامیہ کے مطابق نماز و اجتماعات کوروک دیا جائے : علامہ باقرعباس زیدی

الرٹ نیوز :‌ مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس جیسی وبا پر قابو پانے کے لیے اگر بروقت اقدامات نہ کیے گئے تو یہ ناقابل تلافی نقصان کا سبب بن سکتا ہے۔

فتویٰ مراجع و فقہائے امامیہ کے مطابق نمازجمعہ و جماعت و دیگر مذہبی وعقیدتی اجتماعات کوروک دیا جائے ۔ اس مرض کے ممکنہ پھیلاو کی روک تھام صرف حکومتی ذمہ داری نہیں بلکہ ہر شہری پر یہ فرض عائد ہوتا ہے کہ وہ اپنی استطاعت و اہلیت کے مطابق اپنے حصے کی ذمہ داری ادا کرے۔

ماضی میں بھی ہر مشکل گھڑی میں حکومت کے شانہ بشانہ خدمات سرانجام دیں ہیں۔ سینکڑوں کارکنوں نے ملک بھر کی طرح کراچی و سندھ بھر میں اپنی رضا کارانہ سرگرمیوں کا آغاز کر دیا ہے۔ جس میں کورونا وائرس سے بچاو کیلئے آگاہی مہم اور بلا رنگ و نسل شہر کی عوام میں راشن کی تقسیم کا عمل جاری ہے ، اس حوالے سے شہر قائد میں موجود ضلعی دفاتر سے راشن کی تقسیم و دیگر رضاکارانہ کاموں کا سلسلہ جاری ہے۔

مجلس وحدت مسلمین کے ذیلی ادارے المجلس ڈیزاسٹر منیجمنٹ سیل( اے ڈی ایم سی ) کا قیام نہ صرف بروقت فیصلہ ہے بلکہ قومی مشکلات میں ایک مذہبی و سیاسی جماعت کے احساس ذمہ داری پر بھی دلالت کرتا ہے۔ انہوں نے سکھر قرنطینہ سے کراچی و دیگر شہروں میں گھروں کو لوٹنے والے زائرین اور بہترین انتظامات کرنے پر ایم ڈبلیو ایم کے رضا کاران کو مباک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ تمام مسافروں نے طویل زحمت کا سامنا کیا اور مشکل وقت گزارا ہے .

قرنطینہ کے عمل سے گزرنے والے زائرین بائیس کڑورپاکستانیوں کی جان کے تحفظ کے ضامن بنے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ملک و قوم کو کورونا کی آفت سے نجات دلانے کی کوششوں میں ہمارا کردارانشا اللہ مثالی ہو گا۔ اس سلسلے میں اپنے اہداف کا تعین اور مستقبل کا لائحہ عمل طے کیا جا چکا ہے اورکورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے ہم میدان عمل میں موجود ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں