سندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ سمیت کھانے کی ہوم ڈیلیوری اور پارسل پرپابندی

الرٹ نیوز: وزیر ٹرانسپورٹ سندھ اویس شاہ کی جانب سے صوبہ سندھ میں شہروں کے اندر چلنے والی پبلک ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی عائد کردی گئی ہے۔

وزیر ٹرانسپورٹ سندھ اویس شاہ نے سندھ بھر میں پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی شہری بیمار ہے یا ضروری کام ہے تو وہ ٹیکسی یا رکشہ استعمال کرے۔ لوکل بسیں اور آن لائن بس سروس پر بھی پابندی ہے جبکہ صوبے میں 2 دن میں 300 گاڑیوں کو چالان کیا گیا ہے۔

وزیر ٹرانسپورٹ سندھ اویس شاہ کے مطابق 50 کے قریب روٹ پرمٹ منسوخ کر دیئے گئے ہیں جبکہ 20 گاڑیاں تھانوں میں بند ہیں اور 5 ٹرانسپورٹرز پر مقدمے بھی درج کیے گئے ہیں۔

جبکہ دوسری جانب کمشنر کراچی نے بھی سندھ میں 15 روز کے لاک ڈاؤن کے حوالے سے شہر میں کھانے کی ہوم ڈیلیوری اورپارسل پر پابندی عائد کردی، جبکہ دکاندار وں کو سندھ حکومت کی مقررہ پرائس لسٹ کے مطابق اشیاء خرد و نوش فروخت کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

کمشنر کراچی کا کہنا ہے کہ شہر میں بسیں، آن لائن ٹیکسی سروسز، بس سروس اور رکشے وغیرہ کو شاہراہوں پر گزرنے کی اجازت نہیں ہوگی، جبکہ گھر کے صرف ایک فرد کو سودا سلف خریدنے کی اجازت ہوگی۔

کمشنر کراچی کے مطابق لاک ڈاؤن کے دوران فارم ہاوسز اور گھروں میں تقریبات پر پابندی ہوگی، کھانے کی ہوم ڈلیوری اورپارسل پربھی پابندی عائد کی گئی ہے اور تمام ریسٹورنٹس کےکچن بھی بند رہیں گے۔ کریانہ اسٹورز کو ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیں گی، جبکہ انہیں حکومت کی مقررہ پرائس لسٹ کے مطابق اشیاء خرد و نوش فروخت کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *