بلاوڑہ شریف درگاہ 3 ہفتے کے لئے بند کردی گئی

الرٹ نیوز : کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر دربارعالیہ بلاوڑہ شریف کوٹلی ستیاں اور کلرسیداں میں موجود اپنے آستانے کو کم از کم 3 ہفتوں کے لیے مکمل بند کرنے کا اعلان کردیا ہے .

محکمہ اوقاف کی جانب سے ملک بھر میں اپنی درگاہوں کو بند کرنے کا سلسلہ جاری ہے ، جس کے بعد راولپنڈی کے حلقہ کی معروف درگاہ بلاؤڑہ شریف کو بھی بند کردیا گیا ہے ، کلرسیداں کے علاقے لونی جندراں بائی پاس پر واقع اس درگاہ میں جمعرات اور اتوار کو عوام کو بھرپور مجمع ہوتا تھا .

اس متنازعہ رہنے والے آستانے کے خلاف سوشل میڈیا پر حالئہ دنوں میں‌ تنقید بھی کی گئی تھی کہ وہ کورونا کو دم کیوں نہیں‌ کرتے ،اس حوالے سے معروف عالم دین مزاحیہ انداز میں‌ انتہائی سنجیدہ خطابت کرنے والے ناصر مدنی نے بھی کہا تھا کہ پیر آف بلاؤڑہ کو چاہئے کہ وہ اپنی خدمات چینی حکومت کو پیش کریں تاکہ ہماری چین سے دوستی مذید پختہ ہو سکے اور اس کے بعد ملک بھر کے کورونا کے مریضوں کی صحت یابی کا بھی سلسلہ ہو .

مذکورہ آستانہ سے اعلان کیا گیا کہ مریدین نوٹ کرلیں کیوں کہ 3 ہفتے درگاہ بند رہے گی ، اس دوران پیر صاحبزادہ حق خطیب حسین علی بادشاہ سرکار گھر میں ہی رہیں گے .

معلوم رہے کہ مذکورہ درگاہ کے پیر حق خطیب حسین علی ہمشیہ رنگیلے چمکیلے لباس میں رہنے اور مجموعی طور پر اسپیکر کے ذریعے دم کرنے کے حوالے سے تنقید کی زد میں بھی رہتے ہیں تاہم علاقے میں‌ نمایاں و کثیر تعداد میں عوامی حلقہ وہاں سے فیض یاب ہونے کا دعوی بھی کرتا ہے .

موجودہ پیر حق خطیب حسین علی سرکار کے والد ماجد پیر صوبیدار مسنجف علی اسی درگاہ میں‌ رہے جن کے حلقہ مریدین بھی کافی تعداد میں ہیں تاہم ان کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ انتہائی سادہ مزاج اور سادہ طبیعت کے انسان تھے .

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *