چینی صدر کا کرونا وائرس سے متاثرہ شہر کا دورہ

عالمی الرٹ:چین کے صدر شی جن پنگ نے شہر ووہان میں کرونا وائرس پھیلنے کے بعد پہلی مرتبہ شہر کا دورہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چین کے صدر شی جن پنگ نے چین کے اس علاقے (ووہان) کا دورہ کیا ہے جہاں سے وائرس دنیا بھر میں پھیلا تھا۔ صدر شی کے منگل کو پہلی بار صوبہ ہوبائی پہنچے ہیں جہاں وہ وبا کی روک تھام کے اقدامات کا جائزہ لیں گے۔چینی صدر کے دورے کو علاقے میں وائرس کے کنڑول کیے جانے کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

حکام کے مطابق چینی صدر ووہان میں کرونا سے نمٹنے والے طبی عملے، فوجی افسران، کمیونٹی ورکرز، پولیس اہلکاروں، مریضوں اور مقامی افراد سے ملاقاتیں کریں گے۔ شی جن پنگ کے غیر اعلانیہ دورے کو جنوری سے لاک ڈاؤن کیے گئے شہر میں غیر معمولی اہمیت دی جا رہی ہے جہاں نئے کرونا مریضوں کی تعداد میں گزشتہ ہفتے تیزی سے کمی آئی ہے۔

چین میں حکام پر کرونا وائرس سے بروقت اور درست طریقے سے نہ نمٹنے پر سخت تنقید ہوئی جس کے بعد ہوبائی صوبے اور ووہان شہر کے مقامی افسران کے خلاف تادیبی کارروائی بھی کی گئی۔

چین میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں کمی آرہی ہے جس کے بعد چین کے شہر ووہان میں بنائے گئے تمام عارضی ہسپتال بند کر دیے گئے ہیں۔ یہ ہسپتال کرونا وائرس کی وبا سامنے آنے کے بعد ریکارڈ 10 دن کی مدت میں تعمیر کیے گئے تھے۔

چینی میڈیا کا کہنا ہے کہ شنگھائی میں کرونا وائرس کے مریضوں کی صحتیابی کی شرح 93 فیصد ہوگئی ہے۔ شنگھائی میں اب تک سامنے آنے والے کرونا کے 342 مریضوں میں سے 319 صحتیاب ہو کر ہسپتال سے ڈسچارج ہوچکے ہیں۔

یاد رہے کہ کرونا وائرس کا آغاز چین کے وسطی صوبے ہوبی سے ہوا تھا اور اس کا شہر ووہان سب سے زیادہ متاثر ہوا تھا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *