اتوار, نومبر 27, 2022
اتوار, نومبر 27, 2022
- Advertisment -

رپورٹر کی مزید خبریں

اہم خبریںواٹر بورڈ نجاری کیلئے اہم قدم : محکمہ کے بجائے باہر کا...

واٹر بورڈ نجاری کیلئے اہم قدم : محکمہ کے بجائے باہر کا افسر لا کر "کمانڈ اینڈ کنٹرول” کا شعبہ قائم

کراچی :‌ کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی نئی انتظامیہ نے ادارے میں اصلاحات کیلئے کمانڈ اینڈ کنٹرول کا محکمہ قائم کر دیا ہے، جس میں تعیناتی ادارے کے بجائے ضلعی انتظامیہ کے گریڈ 18 کے افسر سے کی گئی ہے۔ جو کہ ضلع وسطی میں اسسٹنٹ کمشنر گریڈ 17 سے ترقی حاصل کر کے گریڈ 18 میں آئے ہیں ۔

پیر کو انچارج کمانڈ اینڈ کنٹرول عطاء الرحمن نے سی ای او کی ہدایت پر ایم ڈی سیکریٹریٹ کے دفاتر کا دورہ کیا ۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ CEO کے اسٹاف آفیسر ملک انوار بھی موجود تھے ۔

واضح رہے کہ ادارے میں بے قاعدگیوں کا خاتمہ کرنے اور نظام کو کمپیوٹرائز کرنے کیلئے ادارے میں کمانڈ اینڈ کنٹرول قائم کیا گیا ہے ، جس میں تمام ریکارڈ کو کمپیوٹرائز کرنے کے ساتھ اسٹاف کی مانیٹرنگ اور ان کی لوکیشن کو چیک کرنے کیلئے جدید سسٹم والا کارڈ جاری کیا جا رہا ہے، جو پرائیوٹ اداروں کی طرز پر ہوگا ۔

مزید پڑھیں : کمشنر کراچی نے مجاہد کالونی ایکشن کمیٹی کے مطالبات کے بعد ایک روز کا وقت مانگ لیا

ادارے میں تعینات ہونے والے پہلے CEO سید صلاح الدین احمد نے چارج سنبھالنے کے بعد ادارے میں اصلاحات کیلئے اقدامات اٹھانا شروع کر دئیے ہیں ۔ جس میں افسران سے میٹنگ کر کے انہیں آگاہ کر دیا گیا اور ان کی سابقہ غلطیاں لاپروائی نظر انداز کر کے معافی کا اعلان کیا گیا اور نئی پالیسی کے تحت سب کو اپنا قبلہ درست کر کے کام کرنے کی ہدایت کی گئی ہیں ۔

اس موقع پر سی ای او نے ادارے کے پاس لینڈ کی دستاویزات نہ ہونے کے انکشاف کے بعد پہلے مرحلے پر اس کام کو سر انجام دینے کیلئے اور تمام ریکارڈ حاصل کرنے کیلئے چیف سیکیورٹی آفیسر اور ڈائریکٹر اسٹیٹ لینڈ نثار مگسی کو ٹاسک دیا ہے ، واٹر بورڈ کا معیار آفس کی سیکیورٹی کیلئے خصوصی ہدایات دیں اور داخلی اور خارجی راستوں پر سیکیورٹی لگانے کی ہدایت کی ہے ۔

جب کہ ایک خصوصی ٹیم تشکیل دے کر ایم ڈی آفس کے اطراف کو گرین کرنے اور پودے لگانے کا ٹاسک دیا ہے ، جس پر عملدرآمد شروع ہوگیا ہے ، واٹر بورڈ افسران کے مطابق سب سے بڑی تبدیلی یہ آئی ہے کہ افسر اور ملازمین ڈیوٹی پر آ گئے ہیں، ذرائع کے مطابق ادارے میں بنائی گئی مانیٹرنگ کمیٹیوں نے بھی اپنے کام کا آغاز کر دیا ہے جو کہ 20 گریڈ کے سینئر افسران پر مشتمل ہے ، جس میں گھوسٹ ملازمین کے خاتمے کا بھی پلان ہے، اس سلسلے میں کمیٹی سرگرم عمل ہوگئی ہے ۔

مذید پڑھیں : گلگت: مکس مارشل آرٹس فائٹر علومی کریم کی بھارتی حریف سے فتح پر دنیا بھر میں پزیرائی

واٹر بورڈ میں اصلاحات کے بعد ورلڈ بینک کی جانب سے شہر میں نکاسی آب وفراہمی آب کے بوسیدہ نظام کو تبدیل کرنے کیلئے خطیر رقم فراہم کرنا ہے، اس سلسلے میں ادارے میں ایم ڈی اور ڈی ایم ڈی ٹیکنیکل کے عہدوں پر سی ای او اور سی او او کی تعیناتی ہوگئی ہے ، جب کہ دیگر اہم عہدوں پر تعیناتی ہونا ہے ۔

واضح رہے کہ ابھی تک حکومت سندھ نے ایکٹ میں ترمیم نہیں کی ہے تاہم وولڈ بینک کے پریشر پر کام شروع کر دیا گیا ہے ، جس کی وجہ سے KWSSIP کے ڈائریکٹر اور واٹر بورڈ کے CEO سید صلاح الدین احمد نے اہم تبدیلیاں شروع کر دی ہیں اور KWSSIP میں باہر سے افسران کو باہر لانا شروع کر دیا ہے تاہم اب واٹر بورڈ میں براہ راست باہر سے افسر کو لایا گیا ہے جس پر ادارے کے بعض سینیئر افسران کا کہنا ہے کہ باہر سے لانے کا مقصد یہی ہے کہ انہوں نے نجکاری کرنے کی جانب سے تیزی سے بڑھنا ہے ۔

واٹر بورڈ کے دفاتر میں اس وقت متعدد خواتین و حضرات کو KWSSIP سے لایا گیا ہے اور وہ واٹر بورڈ کے بیشتر کام انہیں سونپے گئے ہیں ۔

عظمت خان
عظمت خانhttps://alert.com.pk
عظمت خان بحیثیت رپورٹر گزشتہ 15 برس سے ملک کے مختلف پرنٹ اور ڈیجیٹل میڈیا اداروں سے وابستہ ہیں اور مذہبی، تعلیمی ، لیبر، فراہمی و نکاسی آب سمیت مختلف امور اور شعبہ جات کے حوالے سے خبروں اور تحقیقاتی رپورٹس کے حوالے سے شہرت رکھتے ہیں ۔ وہ کتابوں کے مصنف اور ابلاغ عامہ میں ایم فل کے طالب علم ہیں ۔
متعلقہ خبریں