ہفتہ, نومبر 26, 2022
ہفتہ, نومبر 26, 2022
- Advertisment -

رپورٹر کی مزید خبریں

تازہ ترینڈین آرٹس و سوشل سائنسز ڈاکٹر نصرت ادریس کے خلاف شکایات کے...

ڈین آرٹس و سوشل سائنسز ڈاکٹر نصرت ادریس کے خلاف شکایات کے انبار لگ گئے

کراچی : جامعہ کراچی نصرت ادریس کیخلاف ہراسمنٹ کی شکایت لیکر خاتون عدالت پہنچ گئی ، نصرت ادریس نے ڈین آرٹس بننے کے بعد ڈرائیور کو یورپین اسٹڈی سینٹر میں بھرتی کر کے گھر کی نوکری پر لگا دیا ، سینٹر کی گاڑی میں یومیہ دو ہزار سے زائد کا پٹرول بھی استعمال کیا جا رہا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جامعہ کراچی کی ڈین آرٹس ڈاکٹر نصرت ادریس نے سینئر خواتین و مرد اساتذہ کے ساتھ بد تمیزی کا سلسلہ روا رکھا ہوا ہے ، جس کی وجہ سے سینئر اساتذہ سخت ذہنی اذیت کا شکار ہیں اور وائس چانسلر ڈاکٹر خالد محمود عراقی سے بوجوہ شکایت بھی نہیں کر پا رہے ۔

ڈاکٹر نصرت ادریس کی ستائی ہوئی جامعہ کراچی کے شعبہ وومن اسٹڈی کی اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر اہلیہ علی نے حصول انصاف کیلئے عدالت سے رجوع کر لیا ہے ، جس میں انہوں نے نصرت ادریس کے چیخنے اور سر عام برا رویہ اختیار کرنے کی شکایت کی ہے اور انصاف کے لئے یونیورسٹی انتظامیہ کے بجائے عدالت سے رجوع کیا ہے ۔

تھرڈ ڈویژن کے اکیڈمک ریکارڈ کی شہرت رکھنے والی ڈین آرٹس ڈاکٹر نصرت ادریس نے 21 جولائی کو ایریا اسٹڈی سینٹر برائے یورپ کی قائم مقام ڈائریکٹر کی حیثیت سے ایک لیٹر جاری کیا جس میں جویریہ طاہر کو ریسرچ ایسوسی ایٹ کے طور پر بھرتی کرنے کی منظوری دی ۔ جس جویریہ کی تنخواہ ماہانہ 30 ہزار روپے مقرر کی گئی ، جویریہ کو معاہداتی مدت 6 ماہ کے لئے بھرتی کیا گیا ۔ تاہم ساتھ ہی اسے اگلے 6 ماہ یعنی 16 جولائی 2022 سے 16 جولائی 2023 تک ایک ساتھ ای سال کی منظوری دیکر انوکھا کارنامہ انجام دیا تھا ۔

جویریہ طاہر نے ایم فل جنرل اور پی ایچ ڈی جنرل ہسٹری میں کیا ہے ۔جب کہ اس کو ASCE میں ریسرچ ایسوسی ایٹ بھرتی کیا گیا ہے ۔ جس میں پوسٹ بھی مشتہر نہیں کی گئی ۔ معاہداتی مدت کے لئے بھرتی ہونے والی ریسرچ ایسوسی ایٹ جویریہ طاہر نے بھی انوکھا کارنامہ انجام دیکر حارث بن عزیز ولد عزیز احمد قریشی کے پی ایچ ڈی کے وائیوا/سیمنار کے لئے پیپر اپنے کمرے میں لیا ۔ جس میں پروفیسر ڈاکٹر تسنیم ، پروفیسر ڈاکٹر عظمی شجاعت اور خود جویریہ طاہر بیٹھی تھیں۔

جس کے بعد جویریہ طاہر نے حارث بن عزیز ولد عزیز احمد قریشی کا رزلٹ بنا کر خود ہی سمسٹر سیل بھیج دیا ، جب کہ یہ سنگین غلطی ہے کیونکہ رزلٹ شیٹ پر کسی سینیئر پروفیسر اور مستقل استاد کے دستخط سے ہی رزلٹ بھیجا جا سکتا تھا ۔ جس پر سمسٹر سیل بھی خاموش ہے ۔

ادھر معلوم ہوا ہے کہ ڈین آرٹس ڈاکٹر نصرت ادریس بحثیت قائم مقام ڈائریکٹر ASCE سینٹر کی کلٹس گاڑی بھی استعمال کر رہی ہیں ۔ جب کہ وہ جامعہ سے کنونس الائوس بھی لے رہی ہیں جو رولز کے خلاف ہے ۔ اس کے علاوہ یومیہ ایک ہزار روپے سے لیکر دو ہزار روپے تک کا پٹرول بھی استعمال کر رہی ہیں ۔ ڈاکٹر نصرت ادریس نے ایک ملازم بھی اس دوران بھرتی کیا ہے ۔ جس کا نوٹی فکیشن میسنجر کا نکالا اور اس کی ڈیوٹی گھر کی ڈرائیوری پر لگا دی ہے ۔

واضح رہے کہ یہی گاڑی استعمال کرنے پر سابق شعبہ کی سابق ڈائریکٹر ڈاکٹر عظمی شجاعت کے خلاف بھی آڈٹ اعتراض لگایا گیا تھا ، جس کے بعد ان سے رقم بھی ریکور کی گئی تھی ۔

ڈین آرٹس ڈاکٹر نصرت ادریس اس کے علاوہ اپلائیڈ اکنامکس ریسرچ سینٹر (AERC) میں بھی قائم مقام ڈائریکٹر تعینات ہیں ، جہاں پر انہوں نے یومیہ اجرت پر کام کرنے والے غریب محنت کشوں کو نکال دیا ہے ۔

واضح رہے کہ وفاقی حکومت اور حکومت سندھ کی جانب سے نئی بھرتیوں کے لئے ضابطہ جاری کیا گیا تھا کہ کسی بھی قسم کی بھرتیوں کے حوالے سے اسامیوں کو مشتہر کیا جائے ۔ جس کے بعد بھرتی کی جائے گی ،تاہم ڈاکٹر نصرت ادریس نے خود ہی ایک شخص بھرتی کر کے اسے سینٹر کی گاڑی دے کر گھر کی نوکری کرائی جا رہی ہے ۔

اس حوالے سے ڈین آرٹس ڈاکٹر نصرت ادریس سے موقف کیلئے رابطہ کیا گیا تاہم ان کا نمبر بند رہا ۔ ان کا موقف موصول ہونے پر من و عن شائع کیا جائے گا ۔

عظمت خان
عظمت خانhttps://alert.com.pk
عظمت خان بحیثیت رپورٹر گزشتہ 15 برس سے ملک کے مختلف پرنٹ اور ڈیجیٹل میڈیا اداروں سے وابستہ ہیں اور مذہبی، تعلیمی ، لیبر، فراہمی و نکاسی آب سمیت مختلف امور اور شعبہ جات کے حوالے سے خبروں اور تحقیقاتی رپورٹس کے حوالے سے شہرت رکھتے ہیں ۔ وہ کتابوں کے مصنف اور ابلاغ عامہ میں ایم فل کے طالب علم ہیں ۔
متعلقہ خبریں