ہفتہ, نومبر 26, 2022
ہفتہ, نومبر 26, 2022
- Advertisment -

رپورٹر کی مزید خبریں

اسلامجھنگ : معہدالفقیر میں سالانہ نقشبندی اجتماع کا مختلف انداز

جھنگ : معہدالفقیر میں سالانہ نقشبندی اجتماع کا مختلف انداز

جھنگ : معہد الفقیر الاسلامی جھنگ کے اصلاحی نقشبندی اجتماع کا انداز عمومی جلسوں سے یکسر مختلف ہے۔

مثلاً مجمع کی انتہائی کثرت کے باوجود شور شرابے اور دھکم پیل کی بجائے پورے ماحول پر ایک پر سکون خاموشی اور سکینت طاری رہتی ہے۔ پرانے لوگ تو باہم گفتگو بھی سرگوشیوں کی صورت کرتے ہیں ۔ البتہ نئے آنے والوں کی آوازیں کبھی کبھار بلند ہو جاتی ہے ۔

کسی قسم کے نعرے نہیں لگائے جاتے اور نہ ہی سبحان اللہ ماشاءاللہ وغیرہ کے زریعہ داد دی جاتی ہے۔ البتہ دوران بیان دبی دبی سسکیاں گاہ گاہ سنائی دیتی ہیں۔

مزید پڑھیں : سادات کو تکلیف پہنچانے کا حکم ؟

اجتماع میں نہ کوئی سٹیج سیکرٹری ہوتا ہے اور نہ کسی بیان کرنے والی شخصیت کا تعارف کرایا جاتا ہے اور نہ مروجہ طریقے سے بلند بانگ القاب و مبالغہ آمیز خطابات کے زریعہ بیان کے لیے دعوت دی جاتی ہے۔ جس کا بیان ہوتا ہے وہ اپنے وقت پر بغیر کسی کے بلاۓ خاموشی سے آ کر منبر پر بیٹھ جاتا ہے اور خطبہ مسنونہ سے گفتگو شروع کر دیتا ہے۔

مزید پڑھیں : بونر داس سانحہ اور گلگت انتظامیہ کا رویہ

اجتماع میں معروف خطباء و نامور مقرررین کو زحمت نہیں دی جاتی۔سیدھے سادھے طریقہ سے اصلاحی بیانات ہوتے ہیں جو انتہائی توجہ اور محویت سے سنے جاتے ہیں۔

معروف اور پیشہ ور نعت خوان حضرات کو بھی زحمت نہیں دی جاتی۔ ذکر کی مجلس کی ابتدا اور اختتام پر ذاکرین شاغلین میں سے کچھ خوش الحان حضرات بیٹھے بیٹھے پورے ادب و احترام سے حمدیہ اور نعتیہ کلام پڑھ لیتے ہیں۔اس کلام کی دل آویزی اور تاثیر سننے سے تعلق رکھتی ہے۔

اجتماع میں رات 10 بجے سے لے کر فجر تک یعنی رات کو کوئی بیان نہیں ہوتا۔ آخری بیان اور نماز عشإ کے فورا بعد تمام مجمع کو سلا دیا جاتا ہے۔ پھر اذان فجر سے ڈیڑھ دو گھنٹے پہلے تمام مجمع اٹھ جاتا ہے اور تہجد ، ذکر و تلاوت اور انفرادی دُعاؤں میں مشغول ہو جاتا ہے ، ہزاروں ذاکرین شاغلین کی انفرادی عبادتوں ، مناجاتوں ،آہ و زاری اور رونے دھونے گڑگڑانے کا یہ ماحول بڑا روح پرور اور دلکش و دلفریب ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں: جامعہ کراچی میں اسلامی جمعیت طلبہ اور ISO کے مابین تصادم

مختلف اوقات میں یکے بعد دیگر مشاٸخ کے مسلسل بیانات ہوتے ہے ایک بیان جو چالیس پینتالیس منٹ پر مشتمل ہوتا ہے جس میں الحَمْدُ ِلله مجمع پوری توجہ ، یکسوئی اور محویت سے ہمہ تن گوش رہتا ہے ۔

محبوب العلمإ والصلحإ پیر طریقت رہبر شریعت مولانا پیر ذوالفقاراحمدنقشبندی مجددی مکمل خاموش و یکسو رہنا پسند فرماتے ہیں۔ اب صحت کی کمزوری کی بناپرحضرت جی مدظلہ ایک یادو بیان فرماتے ہیں۔

ان شاءاللہ اجتماع آنے والی 28.29.30 اکتوبرکو ہو رہا ہے۔ مجموعہ کے تمام محترم و مکرم حضرات کو شرکت کی پر خلوص دعوت دیجاتی ہے۔

متعلقہ خبریں