ہفتہ, نومبر 26, 2022
ہفتہ, نومبر 26, 2022
- Advertisment -

رپورٹر کی مزید خبریں

اہم خبریںسیشن کورٹ کے فیصلے کیخلاف قادیانیوں کی اپیل ہائی کورٹ سے خارج

سیشن کورٹ کے فیصلے کیخلاف قادیانیوں کی اپیل ہائی کورٹ سے خارج

کراچی : صدر کے علاقے میں مرزائیوں کی عبادت گاہ پر شعائر اسلام کے استعمال کے خلاف عدالتی فیصلے کے بعد تھانہ پریڈی میں مقدمہ درج ہونے کے بعد مرزائیوں کی جانب سے سیشن کورٹ کے فیصلے کے خلاف ہائی کورٹ میں چیلج کیا تھا ۔

تفصیلات کے مطابق اہلسنت لیگل فورم اور اہلسنت ڈییسک کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق جشن عید میلادالنبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے موقع پر عالم اسلام کے لئے خوشخبری دی جا رہی ہے کہ سندھ ہائی کورٹ میں قادیانیوں کا جھوٹ بے نقاب ہوا اور شعائر اسلام استعمال کرنے پر پولیس اب ایف آئی آر کے مطایق کارروائی کرے گی ۔

6 اکتوبر کو سندھ ہائی کورٹ میں قادیانیوں کی سیشن کورٹ کے 22A مقدمے میں حکم کے خلاف درخواست کی اہم سماعت ہوئی ۔ سماعت فاضل جج آفتاب احمد گورڑ صاحب نے کی ۔ عدالت میں قادیانیوں نے موقف اپنایا کہ 22A کے مقدمے میں سیشن کورٹ کے 29 ستمبر والے حکم کو کالعدم قرار دیا جائے اور پولیس کو ایف آئی آر درج کرنے سے روکا جائے۔

مذید پڑھیں کراچی میں اسرائیلی ہتھیاروں کی فروخت کا انکشاف

جس کے جواب میں مدعی علامہ عبدالقادر اشرفی کے وکلاء نے فاضل جج کے سامنے 29 ستمبر کو درج کرائی گئی 913/22 ایف آئی آر پیش کردی جس پر فاضل جج نے قادیانیوں کو جھوٹا قرار دیتے ہوئے درخواست یہ کہہ کر خارج کر دی کہ آپ نے عدالت سے غلط بیانی کی کہ ایف آئی آر درج نہیں ہوئی، عدالت نے ایف آئی آر کے مطابق تفتیش جاری رکھنے کا حکم دے دیا۔

عدالتی حکم کے فوری بعد اہل سنت لیگل فورم/ اہلسنت ہیلپ ڈیسک کے وفد نے ایس ایچ او تھانہ پریڈی سے ملاقات کی اور فوری طور پر انویسٹیگیشن کا مطالبہ کیا وفد میں علامہ عبدالقادر اشرفی، محمد عرفان قادری، محمد احمد قادری، محمد سلیم اختر القادری، محمد شاہد، اور محمد افروز ترابی شامل تھے۔

پولیس انویسٹی گیشن ٹیم نے فوری طور پر جائے وقوعہ پر جاکر تمام شواہد حاصل کئے جبکہ وفد اراکین نے ایس ایچ او تھانہ پریڈی سجاد خان اور معاونین تنظیمات اہل سنت کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا۔

مذید پڑھیں : چوکیدار سے ایڈیشنل سیکرٹری سندھ اسمبلی بننے والے افسر کیخلاف از سرِ نو FIA انکوائری کا مطالبہ

بعد ازاں علامہ سید زمان علی جعفری نے اہل سنت لیگل فورم کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے ہائی کورٹ کے اس حکم کو عالم اسلام کے لیے بڑی خوشخبری قرار دیتے ہوئے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ ہائی کورٹ کے حکم کے بعد فی الفور تفتیشی عمل کو مکمل کیا جائے اور آئین شکنی کرنے والوں کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے اور قادیانی جماعت خانے پر موجود شعائر اسلام کو فی الفور منہدم کیا جائے۔

انہوں نے اہلسنت لیگل فورم کے ذمہ داران اور مدعی کے وکلاء سید احتشام، فہیم ضیاء ایڈوکیٹ اور منظور راجپوت کا بھی شکریہ ادا کیا۔ سیشن کورٹ کے فیصلے سے متعلق قادیانیوں کی اپنے جھوٹ کے سبب ہائی کورٹ نے بھی درخواست خارج کر دی ۔

عزت اللّٰہ خان
عزت اللّٰہ خانhttps://alert.com.pk
عزت اللّٰہ خان سینئر رپورٹر ہیں، پشاور پریس کلب کے ممبر ہیں، بعض موضوعات پر ان کی تحقیقاتی رپورٹس صف اول کے اخبارات میں تہلکہ مچا چکی ہیں۔ سرکاری اداروں میں کرپشن پر ان کی گہری نظر ہوتی ہے، معروف ویب سائٹس پر ان کے معاشرتی پہلوؤں پر بلاگز بھی شائع ہوتے رہے ہیں، آج کل الرٹ نیوز کے لیے لکھتے ہیں۔
متعلقہ خبریں