سیکورٹی فورسز اور CTD کی مشترکہ کارروائی میں TTP کا دہشت گرد ہلاک

پشاور : محکمہ انسداد دہشتگردی مالاکنڈ ریجن اور سیکیورٹی فورسز کو معتبر ذرائع سے اطلاع ملی تھی کہ دہشتگردوں کا منظم گروہ علاقہ منگلور ضلع سوات میں دہشت گردی کی بڑی کاروائی کے لیے داخل ہو چکا ہے ۔

اطلاع کے پیش نظر سی ٹی ڈی مالاکنڈ ریجن اور سیکیورٹی فورسز نے علاقہ میں انٹیلیجنس بیسڈ آپریشن شروع کر کے دہشت گردوں نے پولیس اور سیکیورٹٰی فورسز کے جوانوں کو دیکھ کر اچانک اندھا دھند فائرنگ شروع کی ۔

پولیس اور سیکیورٹی فورسز نے حکمت عملی سے خود کو محفوظ کر کے حق حفاظت خود اختیاری کے خاطر بھی جوابی فائرنگ شروع کی۔ نفری اور دہشت گردوں کے مابین فائرنگ کا سلسلہ کافی دیر تک جاری رہا ۔

فائرنگ ختم ہو جانے کے بعد دوران سرچ اینڈ کلیرنس اپریشن ایک دہشت گرد ہلاک شدہ پایا گیا۔ ہلاک شدہ دہشت گرد کی پہچان عادل زیب ولد میاں صاحب جان ساکن شکرے منگلور ضلع سوات ہوئی ۔

مذید پڑھیں : ایبٹ آباد بورڈ کے پیپر لیک کرنے والا 12واں ملزم بھی گرفتار

ہلاک شدہ دہشت گرد کے قبضے سے دستی بم اسلحہ، گولہ بارود برآمد ہوئے۔ ہلاک شدہ دہشت گرد VDC ممبر محمد ادریس خان کے گاڑ ی پر IED بلاسٹ کیا تھا جس میں VDC ممبر ادریس خان بمعہ 2 پولیس اہلکاران سمیت کل 8 افراد شہید ہوئے تھے ۔

ہلاک شدہ دہشت گرد VDC ممبر محمد شیرین کے ٹارگٹ کلنگ کے علاہ ، متعدد مقدمات دہشت گردی، بم دھماکوں اور ٹارگٹ کلنگ میں مطلوب تھا۔ ہلاک شدہ دہشت گرد کے دیگر دہشت گرد ساتھی زخمی حالت میں رات کی تاریکی اور گھنے باغات کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہونے میں کامیاب ہوئے جنکی گرفتاری کے لیے علاقہ میں سرچ اپریشن جاری ہے ۔