عبدالغفور ندیم شہید کے بیٹے صہیب ندیم انتقال کر گئے

کراچی : اہلسنت و الجماعت کراچی کے رہنما و مولانا عبدالغفور ندیم کے فرزند صہیب ندیم کا انتقال ہو گیا ہے ۔ انہیں ہارٹ اٹیک ہوا اور انہیں اسپتال پہنچایا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکے ۔

مرحوم کی نماز جنازہ اہلسنت و الجماعت کے مرکز ناگن چورنگی پر واقع صدیق اکبر مسجد میں ادا کیا جائے گا ۔

صہیب ندیم کے والد اوراہلسنت والجماعت کراچی کے امیر مولانا عبدالغفور ندیم کو 14 مارچ 2010 کراچی انو بائی پارک کے قریب فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا تھا ۔ جن کے ساتھ ان کا چوبیس سالہ بیٹا معاویہ ندیم موقع پر ہی شہید ہو گیا تھا ۔

مذید پڑھیں : گاڑیوں پر داتا صاحب کا بورڈ لگا کر سواریاں گامے شاہ اتارنے والے ڈرائیور کون ؟

واضح رہے کہ مولانا صہیب ندیم نے دو بار جیل بھی کاٹی ہے ، پہلی بار انہیں 16 نومبر 2016 کو کراچی پولیس نے صدیق اکبر مسجد میں چھاپہ مار کر گرفتار کیا تھا ۔ جب کہ دوسری بار ایک برس قبل یکم محرم الحرام کو جلوس نکالنے پر گرفتار کیا گیا تھا جس کے بعد انہیں دو ماہ بعد رہا کیا گیا تھا ۔

صہیب ندیم کا ابتدائی تعلق پنجاب کے علاقے حافظ آباد سے ہے ۔ تاہم ان کے والد کراچی میں آ کر آباد ہوئے ، یہیں تعلیم حاصل کی اور اس کے بعد بچوں نے بھی یہیں پر پڑھا اور والد مولانا علامہ عبدالغفور ندیم کی شہادت کے بعد صدیق اکبر میں مسجد میں ہی ذمہ داریاں سنبھال لی تھیں ۔

ان کے بڑے بھائی مولانا فیصل ندیم اس وقت صدیق اکبر مسجد کے امام خطبیب ہیں ۔ دوسرے نمبر کے صہیب ندیم ، تیسرے پر معاویہ ندیم جو والد کے ساتھ شہید ہو گئے تھے اور چوتھے نمبر پر راشد ندیم اور سب سے چھوٹے سعد ندیم ہیں ۔