تنگوانی میں ملیریا سے بچائو کیلئے حفاظتی اقدامات نہ ہو سکے

تنگوانی ( رپورٹ : پیر بخش نوناری ) تنگوانی ملیریا نے وبائی شکل اختیار کر لیا ، تنگوانی کے قریب گاوں بخش بھٹو میں ملیریا بے قابو ہو کر لوگوں کی زندگیاں نگلنے لگا ۔

ملیریا کے باعث ایک بچہ آٹھ سالہ اسلم ولد حارف بھٹو موت سے لڑتے لڑتے زندگی کی بازی ہار گیا ۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ملیریا وبا کو روکنے کے لیے کسی بھی قسم کی کوئی کارروائیاں شروع نھیں کی گئیں ۔

مزید پڑھیں : ٹرانس جینڈر بل پر کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا موقف سامنے آ گیا

دو ماہ کے دوران ملیریا اور گیسٹرو کے باعث چالیس سے زائد زندگیاں لقمہ اجل بن گئے ۔ ضلعی بھر ملیریا ڈائریا گیسٹرو کے ساتھ دیگر امراض خطرناک ثابت ہونے لگے ۔

پورے ضلعی میں اسی فیصد بچے بچیاں اور بڑے وبائی امراض کے لپیٹ آگئے لوگوں نے حکومت سندھ سے فل فور ضلعی بھر میں ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کرنے کا مطالبہ کر دیا ۔