تنگوانی کے 5 مغوی بازیاب نہ ہونے پر اہل علاقہ کا احتجاج جاری

تنگوانی ( رپورٹ : پیر بخش نوناری ) ضلع بھر میں ڈاکو راج اور پانچ مغوی ڈاکوؤں کے چنگل سے بازیاب نہ ہو سکے ۔ بڑھتی ہوئی بدامنی کیخلاف اور پانچ مغویوں کی بازیابی کیلئے انڈس ہائی وے انڑ پل کے مقام پر احتجاجی دھرنا دھرنے میں مغویوں کے ورثاء اور مختلف سیاسی تنظیموں کے سینکڑوں افراد کی شرکت کی ۔

مظاہرین نے ٹائر جلا کر روڈ بلاک کر دیا ، دھرنے کے شرکاء کی پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی ، دھرنے کے باعث سندھ بلوچستان اور پنجاب آنے جانے والی ٹریفک معطل ہو گئی اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ۔

مذید پڑھیں : تحریک انصاف کے رہنما اور نشے میں مبتلا شخص نے بیوی کو قتل کر دیا

ضلع بھر میں ہر آئے روز اغوا قتل لوٹ مار ڈکیتی کی وارداتیں روز کا معمول بن چکی ہیں ۔ مظاہرین پولیس انتظامیہ کی نااہلی کے باعث ایک ماہ کے اندر 40 سے زائد شہری اغوا ہو چکے ہیں ۔

مظاہرین اب بھی پانچ مغوی عبدالغنی ڈاہانی ،ولی محمد کھوسہ ،ٹرک ڈرائیور نصیر بروہی اور دو طالب علم عاشق سومرو، اشفاق سومرو ڈاکوؤں کے چنگل میں قید ہیں ۔ پولیس خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ۔

مظاہرین بڑھتی ہوئی بدامنی کے باعث شہری عدم تحفظ کا شکار ہیں اور شہریوں میں شدید تشویش پائی جاتی ہے۔ مظاہرین دھرنا تب تک ختم نہیں ہوگا جب تک مغوی بازیات نہیں ہوں گے ۔