پولیس کی شیلنگ سے 4 مظاہرین زخمی ہو کر اسپتال پہنچ گئے

تنگوانی ( رپورٹ پیر بخش نوناری ) تنگوانی ایک تو زوری دوسرا سینہ زوری پولیس چوری کی گئی موٹر سائیکل واپس نہ کرا سکا ، موٹر سائیکل مالک پر ڈنڈے برسا کر انہیں زخمی کر دیا ، وہ اس پور کے شہری کا موٹر سائیکل چوری ہوا تو انہوں نے احتجاجاً سڑک بلاک کر دی ۔

شہریوں کی احتجاج پر پولس برہمی شہریوں پر ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال 4 شہری شدید زخمی ہو گئے ، کندھ کوٹ میں امن و امان کی صورتحال بگڑ گئی ، آئے روز چوری کی واردات معمول بن گئے ۔

کندھ کوٹ غوثپور تنگوانی میں چوری کی وارداتوں میں دن بدن اضافہ ہو گیا ، جب کہ ڈاکوں کے جانب سے لوگوں کو اغوا کرنے کے واقعات میں بھی اضافہ ہو گیا ہے ۔

مزید پڑھیں : قادیانیوں کی عبادت گاہ پر شعائر اسلام کے استعمال پر پابندی کی درخواست پر فیصلہ 29 ستمبر کو متوقع

گزشتہ روز موٹر سائیکل چوری ہونے پر مالکان کی جانب سے احتجاج کرنے پر پولیس کے بے رحم اہلکاروں نے احتجاج کرنے والوں پر ڈنڈے برسا دیئے ، غوث پور بائی پاس کے مقام پر شہریوں نے موٹر سائیکل چوری ہونے پر سڑک بلاک کر دی ۔

جس پر پولیس نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے شہریوں پر ڈنڈے برسا دیئے اور دھرنا ختم کروا دیا ۔ پولیس کی تشدد سے 4 شہری شدید زخمی ہوگئے جن کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے ، دو افراد کی حالت تشویشناک ہونے پر انہیں لاڑکانہ ہسپتال رفر کر دیا گیا ہے ۔

پولیس کی بے رحمانہ کاروائی سے شہری برہم ہو گئے انہوں نے آئی جی سندھ ڈی آئی جی لاڑکانہ سے فوری طور پر نوٹس کا مطالبہ کرتے ہوئے واقعے کی ایس ایس پی کشمور پر مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے شہریوں نے کہا کہ ہمیں انصاف نہیں ملا تو ہم سندھ ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ تک جائیں گے ۔