جامعہ کراچی اور ہیومن رائٹس یوتھ ویلفیئر آرگنائزیشن کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط

کراچی : جامعہ کراچی اور ہیومن رائٹس یوتھ ویلفیئر آرگنائزیشن کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی تقریب کی منگل کے روز وائس چانسلر سیکریٹریٹ جامعہ کراچی میں منعقد ہوئی۔

مفاہمتی یادداشت پر جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خالد محمودعراقی اور ہیومن رائٹس یوتھ ویلفیئر آرگنائزیشن کے صدر تنویر قائم خانی نے دستخط کئے۔

معاہدے کے مطابق ہیومن رائٹس یوتھ ویلفیئر آرگنائزیشن جامعہ کراچی کے طلبہ کی تحقیق کو قومی اور بین الاقوامی مارکیٹوں تک رسائی کے لئے معاونت فراہم کرے گااور اس کے ساتھ ساتھ جامعات اور صنعتی اداروں کے مابین خلیج کو کم کر کے ایک دوسرے کے قریب لانا ہے ۔

مزید پڑھیں : "مرتضی بھٹو کا قاتل کون ؟ "

تاکہ جامعہ کے طلبہ کی تخلیقی سوچ اور جدت طرازی کی مارکیٹ تک رسائی کو آسان کیا جا سکے ۔ مذکورہ معاہدے کے تحت جامعہ کے طلبہ کو ایساپلیٹ فارم فراہم کرنا ہے جس کے ذریعے ان کے آئیڈیاز کو مارکیٹ تک آسانی سے رسائی مل سکے۔

اس موقع پر جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر خالد محمودعراقی نے کہا کہ تخلیقی سوچ اور جدت طرازی کو فروغ دے کر ہی قوموں نے عروج پایا ہے۔ہمارے نوجوانوں میں صلاحیتوں کی کمی نہیں ضرورت اس امر کی ہے کہ انہیں مواقع فراہم کئے جائیں۔