ڈبل روٹی کے من مانے ریٹ کیوں ؟

تحریر : سبحان سید 

میرے عزیز ھم وطنوں اور بِلخصوص کراچی کے عوام اور وہ دوکاندار جو کمپنیوں کی ڈبل روٹی، بن، پاپے اور مختلف آئٹم سیل کرتے ھیں ۔

ان سب کے لیے ضروری پیغام اور اس پیغام کو اپنا قومی فرض سمجھتے ھوئے پورے پاکستان میں پھیلانا ۔۔۔ معاملہ یہ ہے کہ ڈبل روٹی والی کمپنیاں جن میں ڈان اور بیک پارلر سمیت تمام مشہور وغیرہ ، مشہور کمپنیاں جب دل چاہتا ہے ۔ ڈبل روٹی اور تمام آئٹم کے ریٹ بڑھا دیتی ہیں اور 2022 میں تیسری دفعہ ریٹ بڑھائے جا رہے ہیں اور اس بار تو ہر آئٹم پر تقریباً ۲۵ فیصد ریٹ بڑھائے ہیں اور سب سے بڑا ظُلم کہ 15 روپے والا اسکول بن 20 روپے کا کر کے اس کم ازکم 33% فیصد کا اضافہ کر کے اپنے ظلم کا شکار ان بچوں کو بنایا ہے جن کے نام پر یہ اسکول بن بنایا جاتا ہے اور بیچا جاتا ہے ۔

مذید پڑھیں : حوالہ ہنڈی کے ملزمان کو FIA پشاور نے گرفتار کر لیا

تمام عوام، سیاسی و سماجی تنظیمیں، و دوکاندار حضرات اور بے حِس حکمرانوں سے التجا ہے کہ ان ظالم بھیڑیوں اور مگر مچھوں سے بھی پوچھ گچھ کی جائے اور مہنگائی کی چکی میں پِستی ہوئی عوام کو اس بھوک مرنے پروگرام سے نجات دلائی جائے ۔

تمام دوکاندار انسانیت اور مسلمانیت کا تقاضہ پورا کرتے ہوئے اس تحریر کو آگے سے آگے پھیلائیں اور اس تحریر کا پرنٹ نکلوا کر اپنی دوکان پر آویزاں کریں ۔ ان شاءاللہ یہ تمام کمپنی مالکان اپنی اوقات میں واپس آ جایئں گے ۔۔ اللہ پاک ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔۔۔۔