انچارج ٹرانسپورٹ کا طلبہ و طالبات کو سفری سہولیات کی بہتری کیلئے بسوں کا معائنہ

انچارج ٹرانسپورٹ و سینئر ٹرانسپورٹ افسر جامعہ سندھ کا طلبہ و طالبات کی سہولت کیلئے مختلف روٹس پر چلنے والی خانگی بسوں کا معائنہ، ٹھیکیداروں کی فوری طلبی، بسوں کی فٹنیس برقرار رکھنے، حالت بہتر بنانے اور طلباء کے ساتھ ڈرائیوروں کا تعاون یقینی بنانے کا حکم

جامشورو : جامعہ سندھ جامشورو کے انچارج ٹرانسپورٹ قاضی میہر علی اور سینئر ٹرانسپورٹ آفیسر رحمت اللہ شر نے اپنی ٹیم کے ہمراہ طلبہ و طالبات کی سہولت کیلئے مختلف روٹس پر چلنے والی خانگی پوائنٹ بسوں کا معائنہ کیا .

ان کے فٹنیس سمیت نشستوں اور بسوں کی کنڈیشن کا جائزہ لیا اور ٹھیکیداروں کو بسوں کی حالت بہتر بنانے اور ڈرائیوروں کو طلبہ و طالبات کے ساتھ بھرپور تعاون کو یقینی بنانے کا حکم دیا۔

مزید پڑھیں : ڈاکٹر محمد ضیاالدین کو اردو یونیورسٹی کا قائم مقام وائس چانسلر بنا دیا گیا

خانگی بسوں کے معائنے کے دوران انہوں نے پرائیویٹ بسوں کے ٹھیکیداروں ندیم آرائیں اور قاسم بروہی کو بھی طلب کیا اور انہیں ہدایت کی کہ وہ ہر صورت میں بسوں کے فٹینس کو برقرار رکھیں اور دیگر مطلوبہ کاغذات بھی اپنے ہمراہ رکھیں اور اس سلسلے میں کوئی لاپرواہی نہ برتیں۔

قاضی میہر علی کا کہنا تھا کہ بسوں کی مرمت کر کے ان کی حالت بہتر بنائی جائے اور بہترین نشستیں لگائی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ موسم سرما آنے سے قبل خانگی بسوں کی کھڑکیوں کے شیشے لگوائے جائیں اور ڈرائیوروں کو پابند بنایا جائے کہ وہ دوران سفر احتیاط سے ڈرائیونگ کریں۔

انچارج ٹرانسپورٹ نے اس موقع پر پوائنٹ بسوں میں سفر کرنے والے طلبہ و طالبات سے بھی ملاقات کی، جنہوں نے پرائیویٹ بسیں چلانے والے ڈرائیوروں کے خلاف شکایات کیں اور بتایا کہ دوران سفر ڈرائیور تیز رفتاری سے گاڑی چلاتے ہیں اور طلبہ و طالبات کے اترنے کے دوران جلدبازی کا مظاہرہ کرتے ہیں، جس پر انچارج ٹرانسپورٹ نے ٹھیکیداروں کو ڈرائیوروں کے ساتھ میٹنگ کر کے انہیں طلباء کے ساتھ اپنا رویہ بہتر بنانے کے لیے پابند کرنے کی ہدایت کی۔