کیا ہری پور میں PTI اور PMLN میں گٹھ جوڑ ہو رہا ہے ؟

غازی (نمائندہ خصوصی ) پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ نواز ملکی اور صوبائی سطح پر ایک ساتھ بیٹھنے کے روا دار نہیں ہیں ، تاہم ہری پور میں پی ٹی آئی کے صوبائی رہنما بابائے بلدیات یوسف ایوب خان نے پارٹی کے مقامی رہنما عدیل اقبال کے ساتھ مل کر نواز لیگ کے ساتھ پینگیں بڑھانا شروع کر دی ہیں ۔

جس کی تازہ ترین مثال تحصیل غازی کے قصبے سلم کھنڈ میں نظر آئی ہے ۔ مسلم لیگ نواز کے سینیٹر پیر صابر شاہ کے بھتیجے اور تحصیل ناظم قاسم شاہ کی جانب سے سلم کھنڈ ہائی اسکول میں منعقدہ تقریب میں پی ٹی آئی خیبر پختون خوا کے رہنما یوسف ایوب مقامی پارٹی رہنما عدیل اقبال کے ساتھ شریک ہوئے ۔

اس موقع پر جانبین میں طویل بیٹھک ہوئی اور خوش گپیوں کو دیکھ کر اہل علاقہ میں چہ مگوئیاں شروع ہو گئیں ہیں ۔ اس موقع پر مسلم لیگ ن کے رہنما اور تحصیل ناظم غازی قاسم شاہ نے پی ٹی آئی رہنماؤں کا استقبال بھی کیا ۔

مزید پڑھیں : دعوت اسلامی کی محنت سے افریقی ملک ملاوی میں 2600 افراد کو مسلمان ہو گئے

پی ٹی آئی رہنما یوسف ایوب نے ویلیج کونسل کیلئے زمین مختص کرنے اور عمارت کی تعمیر کے حوالے سے تقریب میں عوام کم تعداد میں شرکت پر منتظمین سے گلہ شکوہ بھی کیا ۔

ان کا کہنا تھا کہ مجھے کچھ اختلاف نظر آ رہا ہے ، اس لیے عوام کی کثیر تعداد موجود نہیں ہے ۔ ہم لوگ اتنی دور ہری پور سے یہاں آئے مگر نواحی دیہات کے رہائشی یہاں نظر نہیں آ رہے ہیں۔ منتظمین کی جانب سے سڑک کے مطالبے پر یوسف ایوب شرکاء کی تعداد جتاتے ہوئے کہا کہ سو افراد کے سامنے کیا اعلان کرنا تاہم آپ کے مطالبے پر غور کیا جائے گا ۔

غازی سے منتخب ایم پی اے فیصل جہازاں والا پر کیس بننے کے بعد دونوں جانب سے گہری نظر اس سیٹ پر مختص کر دی گئی ہے ، کیوں کہ تحصل غازی سے پی ٹی آئی کے بجائے زیادہ ووٹ شخصیت کا ہے جو اب بھی فیصل جہازاں والا کے ساتھ ہے ۔ جب کہ ہری پور کی سیاست میں ایک بار پھر تبدیلی نظر آ رہی ہے جس میں عوام کا زیادہ جھکائو ایک بار پھر مسلم لیگ کی جانب ہو گیا ہے ۔ جو حالیہ حکومت کے بعد ختم ہوتا جا رہا تھا ۔