ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لیے ہمیں قائد کے رہنما اصولوں کو اپنانا ہو گا، سپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد،: سپیکر قومی اسمبلی راجا پرویز اشرف اور ڈپٹی سپیکر زاہد اکرم درانی نے بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کو خراج تحسین پیش کرتے ہوے کہا ہے کہ قائد اعظم نے ہر مشکل کا مستقل مزاجی اور جواں مردی سے مقابلہ کیا اور ہمیشہ اپنے اصولوں پر قائم رہے اور نے کبھی سودہ بازی نہیں کی۔

انہوں نے کہا قائداعظم نے کھبی کسی پر اپنے فیصلے مسلط کرنے کی کوشش نہیں کی اور مخالفین کے موقف کو بھی تحمل اور بردباری سے سنا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے قائد اعظم کی 74ویں برسی کے موقع پر اپنے علیحدہ علیحدہ پیغامات میں کیا جو اتوار کے روز ملک بھر میں عقیدت و احترام سے منائی جا رہی ہے۔

سپیکر نے کہا کہ قائد اعظم کے رہنما اصولوں ایمان ،اتحاد اور نظم و ضبط پر چل کر ہی ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا جا سکتا ہےاور درپیش مسائل کو حل کیا جاسکتا ۔

مزید پڑھیں:چوری و چھینی گئی گاڑیاں اصل مالکان کے حوالے، کراچی پولیس ترجمان

انہوں نے تمام سیاسی قوتوں پر آپس کے اختلافات بھلا کر باہمی اتحاد سے ملک کو درپیش مشکلات پر قابو پانے کے لئے مل کام کرنے کرنے ضرورت پر زور دیا۔

سپیکر قومی اسمبلی کا مزید کہنا تھا کہ ملک اس وقت تاریخ کے بدترین سیلاب اور طوفانی بارشوں کی وجہ سے ایک مشکل دور سے گزر رہا ہے اس وقت سیلاب کی کی وجہ لاکھوں افراد بےگھر ہیں اور کھلے آسمان تلے زندگی بسر کر رہے ہیں .

انہوں نے کہا کہ لاکھوں ایکڑ پر کھڑی فصلیں تباہ ہو چکی ہیں اور بنیادی ڈھانچہ بھی بری طرح متاثر ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سیلاب سے ہونے والے نقصانات کا ازالہ کرنے لیے ہمیں قومی جذبے سے کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قومی اتحاد کی جتنی ضرورت اسوقت اس سے پہلے کھبی نہیں تھی ۔

مزید پڑھیں:کامران ٹیسوری کی واپسی پراختلافات ، متحدہ نے ہنگامی اجلاس بلالیا

انہوں کہا کہ آج اس تجدید عہد کا دن کہ ہم پاکسان کو قائد اعظم کے وژن مطابق صحیح معنوں ایک اسلامی فلاحی ریاست بنانے کے لیے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کریں گے۔

اس موقع پر ڈپٹی سپیکر زاہد اکرم درانی نے کہا کہ قائد اعظم کی قیادت میں بر صغیر کے مسلمانوں ایک مختصر عرصے ایک آذاد مملکت کے قیام کو ممکن بنایا جس کی دنیا کی تاریخ کا ایک میں کوئی مثال نہیں ملتی ۔

انہوں نے مزید کہا کہ قائد اعظم کی ولولہ انگیز قیادت نے بر صغیر کے مسلمانوں ایک آذاد ملک کے حصول کے لیے ایک پلیٹ فارم پر اکھٹا کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم قائد اعظم کے رہنما اصولوں پر عمل پیراہ ہو کر ہی اس ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کر سکتے ہیں۔