جامعات میں بھرتیوں کا اختیار CM کو دینا خلافِ قانون ہے : شاہ عالی القدر

کراچی : صدر انجمن اساتذہ جامعہ کراچی پروفیسر ڈاکٹر شاہ علی القدر نے اساتذہ کے نام پیغام میں کہا ہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے صوبہ کی تمام جامعات کو ایک مراسلہ بھیجا گیا ہے جس میں گریڈ 1 سے 22 تک کی ریگولر یا کنٹریکٹ بھرتیوں کو چیف منسٹر کی پیشگی منظوری سے مشروط کر دیا ہے ۔

اس حوالے سے تمام جامعات کے اساتذہ، غیر تدریسی عملہ، آفیسرز کے جائز اور بالخصوص انسانی حقوق کی نفی کی گئی ہے ۔ اس مراسلے سے جامعات کے وائس چانسلرز کی بے توقیری کی گئی یے ۔ جو قابل مذمت ہے ۔

یہ سراسر غیر آئینی اقدامات ہیں جو جامعات کی خود مختاری پر حملہ ہیں ۔جس کی وجہ سے انجمن اساتذہ جامعہ کراچی اس سلسلہ میں تمام اسٹیک ہولڈرز سے رابطہ میں ہے اور بروز پیر 5 ستمبر 2022 کو اسٹاف کلب میں دن 11 بجے میٹنگ کر رہی ہے ۔

مذید پڑھیں : جامعہ کراچی لائبریری ڈیپارٹمنٹ میں کمپیوٹر لیب کی چھت گر گئی

اس اجلاس میں اس غیر قانونی اور غیر آئینی اقدام کے خلاف لائحہ عمل پر غور کیا جائے گا ۔ فپواسا سندھ چیپٹر اس ضمن میں پہلے ہی نوٹس لے چکی ہے اور صوبائی سطح پر اس پر رابطے کیے جا رہے ہیں ۔