جامعہ کراچی سلیکشن بورڈ ایکشن کمیٹی کے تحت اساتذہ کا یومِ سیاہ

جامعہ کراچی : جامعہ کراچی میں سلیکشن بورڈ ایکشن کمیٹی نے اپنے احتجاج کے دائرہ کار کو پھیلاتے ہوئے یکم ستمبر بروز جمعرات یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا تھا جس میں جامعہ کے اساتذہ نے بھر پور انداز میں ساتھ دیا ۔

 

واضح رہے کہ منگل کے روز سلیکشن بورڈ ایکشن کمیٹی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اس بات کا عندیہ دیا تھا کہ مطالبات نہ مانے جانے کی صورت میں احتجاج کے دائرے کو بتدریج بڑھا دیا جائے گا۔

مزید پڑھیں:سرکاری ملازمین کی تنخواہ کی کٹوتی کا شیڈول جاری

اس ضمن میں جمعرات کے روز اساتذہ نے بازو پہ سیاہ پٹیاں باندھ کہ اپنے تدریسی فرائض سر انجام دیے۔ سلیکشن بورڈ کمیٹی کے ارکان نے اپلائیڈ کیمسٹری ،فزیالوجی، اسٹیٹس، اپلائیڈ فزکس ، کیمسٹری ، جیالوجی، میتھس، باٹنی، میرین بیالوجی، زولوجی، مائکرو بیالوجی ، بائیوکیمسٹری، بائیوٹکنالوجی، لائبریری سائنس، اسلامک ہسٹری، سوشل ورک، سوشیالوجی، پولیٹیکل سائنس، اکنامکس، سائیکالوجی، ہسٹری، سندھی، فارسی پروٹیومکس، کیمیکل انجنئیرنگ، فزکس ڈیپارٹمنٹ کے اساتذہ سے ان کے شعبہ جات میں ملاقاتیں کیں۔

 

اساتذہ کا کہنا تھا کہ 2019 کے اشتہار کے سلسلے میں جمع کرائی گئی درخواستوں پہ انتظامیہ کی جانب سے عدم کاروائی اساتذہ میں بے چینی اور مایوسی کا سبب بن رہی ہے ۔

 

اسکروٹنی اور غیر ملکی ریفریز کی آڑ میں سلیکشن بورڈ میں غیر ضروری تاخیر کی جارہی ہے۔جس کی وجہ سے اساتذہ کی بڑی تعداد کا سلیکشن بورڈ سے پہلے ہی ریٹائرڈ ہونے کا خدشہ ہے۔

مزید پڑھیں:پاشا کی 45 ممبر کمپنیوں نے متعدد ملٹی ملین ڈالر کے سودوں پر معاملات طے کر لیے

سلیکشن بورڈ ایکشن کمیٹی کے مطالبات میں 2019 کے اشتہار کے تحت ہونے والے سلیکشن بورڈ کا شیڈول اور اساتذہ کی درخواستوں پہ جامعہ کے کوڈ اور ترمیمی بل 2018 کے تحت کاروائی شامل ہے۔

 

مزید براں سلیکشن بورڈ ایکشن کمیٹی نے احتجاج کے دائرہ کار کو بڑھاتے ہوئے چھ ستمبر بروز منگل ایڈمن بلڈنگ کے آگے علامتی بھوک ہڑتال کرنے کا بھی اعلان کیا ہے۔