پاشا کی 45 ممبر کمپنیوں نے متعدد ملٹی ملین ڈالر کے سودوں پر معاملات طے کر لیے

کراچی :پاکستان سافٹ ویئر ہاؤسز ایسوسی ایشن اور اس کے 45 ہائی پروفائل ممبران نے کراچی میں منعقدہ آئی ٹی سی این ایشیا 2022 میں شرکت کی ہے – جو کہ ایک ہمہ گیر، بین الاقوامی سطح پر نہایت اہم آئی ٹی اور ٹیلی کام ایگزیبیشن ہے۔

ان کمپنیوں نے اپنی خدمات، انسانی وسائل کی دستیابی، برآمدی صلاحیت، کاروباری عمل کی آؤٹ سورسنگ کی صلاحیتوں، بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ ٹیک انفراسٹرکچر، مصنوعی ذہانت میں مہارت اور سافٹ ویئر اور ایپ کی ڈیویلپمنٹ کی صلاحیتوں کی نمائش کی۔

ایونٹ کے بعد کی تفصیلات کے مطابق، بین الاقوامی نمائش کا بھرپور فائدہ اٹھا تے ہوئے، پاکستان کی بڑی آئی ٹی کمپنیوں نے ملٹی نیشنل کمپنیوں، بلین ڈالر اسٹارٹ اپس اور بڑے کاروباری گروپوں کے ساتھ ملٹی ملین ڈالرز کے متعدد سودے اور معاہدے کر لیے ہیں

وفاقی وزیر برائے آئی ٹی اینڈ ٹیلی کام سید امین الحق کے مقرر کردہ ہدف کے مطابق پاشا پاکستان کی آ ئی ٹیلی ایکسپورٹس کو مالی سال 2023 میں 5 ارب ڈالر کے ہدف تک لے جانے کے لیے پوری طرح تیار ہے۔

چیئرمین  پاشا بدر خوشنود کے مطابق اس ہدف کو حاصل کرنے کے لئے آ ئ ٹی کمپنیوں کو صرف موافق اور قابل بھروسہ گورنمنٹ پالیسیوں کی ضرورت ہے.

پاکستان سافٹ ویئر ایکسپورٹ بورڈ اور اسپیشل ٹیکنالوجی زونز اتھارٹی اور دیگر سرکاری اداروں کے مطابق برآمدی ترقی کے ہدف کو حاصل کرنے سے پانچ لاکھ نئی ملازمتیں پیدا ہو سکتی ہیں۔

واضح رہے کہ آئی ٹی سی این ایک عالمی اہمیت کا ایونٹ ہے، کیونکہ اس میں تمام آئی ٹی، ای کامرس، سافٹ ویئر، ٹیلی کام، فنٹیک، ایجوٹیک، آ رٹیفیشل انٹیلیجنس اور دیگر آئی ٹی سے چلنے والی خدمات سے متعلقہ کمپنیاں اور ادارے شامل ہوتے ہیں. جس کی وجہ سے بین الاقوامی میڈیا کی توجہ بھی حاصل ہوتی ہے اور ملک کا سافٹ امیج بھی اجاگر ہوتا ہے ۔

سید امین الحق نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان آئی ٹی کے شعبوں میں کچھ ہی سالوں میں اپنی آ ئی ٹی ایکسپورٹس کو 15 ارب ڈالر تک بڑھا سکتا ہے.