واپڈا کیجانب سے عائد فیول ایڈجسٹمنٹ ٹیکس نامنظور : عبد الرشید عباسی

کھلابٹ : واپڈا کے بھاری ظالمانہ فیول ایڈجسٹمنٹ ٹیکس کو کسی صورت تسلیم نہیں کرتے متاثرین تربیلہ ڈیم ہیں ہمارے آباؤ اجداد نے اس ڈیم کی تعمیر قوم اور ملک کی خوشحالی کے لیے عظیم قربانیاں دیں۔

واپڈا حکام اور وفاقی حکومت متاثرین تربیلہ پر لگے تمام ظالمانہ ٹیکس کا خاتمہ اور متاثرین تربیلہ ڈیم کے بجلی معاف کرے ظالمانہ ٹیکس کا خاتمہ نہ کیا گیا تو پھر ہم بھی افغان مہاجرین کیمپوں اور کراچی کی طرح سرعام کنڈے لگا کر مففت کی بجلی استعمال کریں گے پھر ہم دیکھیں گے کہ ہمیں کون روکتا ہے۔

مزید پڑھیں:مصیبت کی اس گھڑی میں ڈاکٹرز بھی قوم کے ساتھ کھڑے ہیں، پروفیسر نصرت شاہ

ان خیالات کا اظہار متاثرین تربیلہ ڈیم کے راہنماؤں عبد الرشید عباسی محمد سجاد عباس چیئرمین سید عباس شاہ چیف مشتاق سمیت دیگر راہنماؤں نے سیکٹر نمبر 3 کھلابٹ کے کمیونٹی سنٹر میں واپڈا کے ظالمانہ ٹیکس کے خلاف منعقدہ احتجاجی پروگرام میں عوام علاقہ کی کثیر تعداد سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انھوں نے عوام علاقہ سے متفقہ قرارداد پاس کرواتے ہوئے کہا کہ ہمیں مرنا پڑا مریں گے مار کھانی پڑی ما کھائیں گے مگر کسی صورت واپڈا کی چور بازاری قبول نہیں کریں گے۔

مزید پڑھیں:آج کل اساتذہ اپنی CV کو مضبوط کرنے کیلئے کوشاں رہتے ہیں جبکہ انکی اصل CV شاگرد ہوتے ہیں۔ڈاکٹر خالد عراقی

واپڈا خود صنعتوں اور دیگر انڈسٹری سمیت کمرشل اور افغان مہاجر کیمپوں میں چوری کی بجلی فروخت کرتے ہیں ان کی چور بازاری کا نزلہ ہم برداشت نہیں کریں گے واپڈا اور وفاقی حکومت متاثرین تربیلہ ڈیم کی بجلی کے 200 یونٹ معاف اور تمام ظالمانہ ٹیکس کا خاتمہ کرے بصورت دیگر احتجاج کا دائرہ کار وسیع کیا جائے گا کسی صورت خاموش نہیں رہیں گے۔