سپلائی اور قلت کو دیکھ کر بھارت سے فوڈ آئٹمز منگوانے کا فیصلہ کریں گے ، مفتاح

مفتاح اسماعیل

اسلام آباد : وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ سپلائی کی کمی اور قلت کی صورتحال دیکھ کر بھارت سے فوڈ آئٹمز منگوانے سے متعلق فیصلہ کریں گے۔

وفاقی وزیر خزانہ نے ایک بیان میں کہا کہ ایک سے زیادہ بین الاقوامی ایجنسیوں نے حکومت سے رابطہ کیا ہے، بین الاقوامی ایجنسیوں نے زمینی راستے سے بھارت سے فوڈ آئٹمز لانے کی اجازت مانگی ہے۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ سپلائی اور قلت کی صورتحال دیکھ کر حکومت اتحادیوں اور اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت کر کے بھارت سے فوڈ آئٹمز منگوانے کا فیصلہ کرے گی۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت سپلائی کی کمی کی بنیاد پر فوڈ آئٹمز منگوانے کی اجازت دینے یا نہ دینے کا فیصلہ کرے گی۔ واضح رہے کہ بارشوں اور سیلاب سے فصلوں کی تباہی کے بعد ملک بھر میں سبزی کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں ۔

راستوں کی بندش کے باعث قیمتوں میں مزید اضافہ ہو رہا ہے، ٹماٹر اور پیاز کے دام سب سے اوپر ہیں، راولپنڈی اور لاہور سمیت کئی شہروں میں پیاز 300 روپے فی کلو سے بھی زائد پر فروخت ہو رہا ہے۔ ٹماٹر کی قیمت 250 سے 300 روپے فی کلو تک پہنچ گئی ہے، آلو ایک سو بیس روپے تک بھی مل رہا ہے ۔