حکومت نے 8 شہروں میں اینٹی منی لانڈرنگ و کاونٹر فنانسنگ آف ٹیررازم کے تھانے قائم کر دیئے

کراچی : ایف آئی اے نے وفاقی حکومت کی منظوری کے بعد ملک کے ملک کے 8 بڑے شہروں میں ایف آئی اے اینٹی منی لانڈرنگ و کائونٹر فنانسنگ آف ٹیررازم کے پولیس اسٹیشن قائم کر دئیے ہیں جس کا نوٹیفکشن بھی جاری کر دیا گیا ہے ۔

نوٹی فیکشن کے مطابق پولیس اسٹیشنز متعلہ سرکلز میں کام کریں گے۔ ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ پولیس اسٹیشن کراچی ، لاہور ، فیصل آباد ، ملتان ، سکھر، اسلام آباد، کوئٹہ اور پشاور میں کام کریں گے، جاری نوٹیفکیشن میں ان پولیس اسٹیشنز کے دائرہ اختیار کا بھی تعین کیا گیا ہے ۔

ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ کراچی پولیس اسٹیشن کا دائرہ کار کراچی ڈویژن سمیت حیدر آباد اور بھنبور ڈویژن پر مشتمل ہو گا، لاہور ڈویژن کی حدود میں لاہور اور گوجرانوالہ ڈویژن شامل کئے گئے ہیں ، فیصل آباد ڈویژن کا دائرہ کار فیصل آباد اور سرگودھا ڈویژنز پر مشتمل ہو گا ۔

ملتان ڈویژن میں ملتان، ڈی جی خان، ساہیوال اور بہاولپور ڈویژن شامل کئے گئے ہیں، سکھر ڈویژن میں سکھر، لاڑکانہ، میرپور خاص اور شہید بے نظیرآباد ڈویژن شامل کئے گئے ہیں ۔

اسلام آباد دویژن کا دائرہ اختیار راولپنڈی، اسلام آباد کیپیٹل اور گلگت بلتستان ڈویژن پر مشتمل ہے، کوئٹہ ڈویژن پولیس اسٹیشن کی حدود میں پورا صوبہ بلوچستان شامل کیا گیا ہے ۔

پشاور ڈویژن پولیس اسٹیشن کی حدود پورے صوبہ خیبر پختونخواہ پر محیط ہو گی ۔ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ قائم کیے جانے والے سرکلز کو پولیس اسٹیشن کا درجہ حاصل ہو گا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل ایف آئی اے ہیڈ کوارٹرزمیں اے ایم ایل و سی ایف ٹی ڈائریکٹوریٹ قائم کیا گیا تھا۔