بھارت میں عامر خان کی نئی فلم ’’لال سنگھ چڈھا‘‘ کے بائیکاٹ کا مطالبہ

ممبئی: بالی ووڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان کی نئی فلم ’’لال سنگھ چڈھا‘‘ کے ریلیز سے قبل بائیکاٹ کا مطالبہ سامنے آگیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق اداکار کے 2015 میں دیے گئے انٹرویو کی بنیاد پر ایک مخصوص طبقہ ان کی مخالف کررہا ہے جس میں عامر نے کہا تھا کہ بھارت میں عدم برداشت پروان چڑھا ہے۔

بائیکاٹ لال سنگھ چڈھا ہیش ٹیگ کے ساتھ اب تک ہزاروں ٹوئٹس کی جاچکی ہیں اور لوگوں کی جانب سے عامر خان اور کرینہ کپور پر تنقید بھی کی جارہی ہے۔

اس بائیکاٹ کی وجہ ماضی میں عامر خان کا ایک بیان ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ بھارت اب محفوظ نہیں رہا۔
اسی طرح لوگوں کی جانب سے عامر خان کی فلم ‘پی کے’ کے کلپس شیئر کرکے الزام لگایا جارہا ہے کہ وہ ایک مذہب کو ماننے والوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچا رہے ہیں۔

عامر خان نے اس حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری فلم کا بائیکاٹ نہ کریں۔

ایک ایونٹ کے دوران عامر خان نے کہا کہ ‘ہاں مجھے اچھا محسوس نہیں ہورہا، کچھ لوگ کہہ رہے ہیں کہ میں بھارت کو پسند نہیں کرتا، مگر یہ درست نہیں، تو پلیز میری فلم کا بائیکاٹ نہ کریں بلکہ اسے دیکھیں’۔

1994 کی فلم فارسٹ گمپ میں ٹام ہینکس نے مرکزی کردار ادا کیا تھا اور عامر خان سے ہالی وڈ اداکار کی پرفارمنس کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ ‘ٹام ہینکس کے کردار کی سب سے بڑی خوبی اس کی معصومیت ہے’۔

لال سنگھ چڈھا میں عامر خان اور کرینہ کپور کے ساتھ Naga Chaitanya اور مونا سنگھ اہم کردار ادا کررہے ہیں۔

 

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *