جوڈیشل کمیشن کا اجلاس، چیف جسٹس کے تجویز کردہ نام مستر

Islamabad High Cout

اسلام آباد ( رپورٹ: اعجاز خان) سپریم جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں پاکستان کے چیف جسٹس عمرعطا بندیال کی طرف سے سپریم کورٹ میں تعیناتی کے لیے پیش کیے گئے پانچ ناموں کو کثرت رائے سے مسترد کردیا ہے۔

مزید پڑھیں:ٹام کروز کے ایک خطرناک اسٹنٹ کی تصاویر وائرل

چیف جسٹس جو کہ سپریم جوڈیشل کمیشن کے سربراہ بھی ہیں کے جمعرات کو ہونے والے اجلاس میں پانچ ناموں کو زیر غور لایا گیا، ان میں پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس قیصر رشید، لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد وحید اور جسٹس حسن اظہر جبکہ سندھ ہائی کورٹ سے جسٹس شفیع صدیقی اور جسٹس نعمت اللہ کے ناموں پر غور کیا گیا۔

ان ناموں پر غور کرنے کے بعد جب ان ناموں کی منظوری کے لیے رائے لی گئی تو چیف جسٹس کی جانب سے پیش کیے گئے تمام نام کثرت رائے سے مسترد کردیے گئے۔

مزید پڑھیں؛بگ باس 16 کا گھر کیسا ہوگا؟ تصاویر لیک

جوڈیشل کمیشن کے جن ارکان نے چیف جسٹس کی طرف سے پیش کیے گئے ناموں کو مسترد کیا ان میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ، جسٹس سردار طارق مسعود، اٹارنی جنرل اشتر اوصاف، وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ اور پاکستان بار کونسل کے نمائندے اختر حسین شامل ہیں۔

کمیشن کے ایک اور رکن جسٹس سرمد جلال عثمانی نے سندھ ہائی کورٹ کے دو ججز کے ناموں پر اختلاف کیا جبکہ باقی تین ناموں سے اتفاق کیا۔ چیف جسٹس کی طرف سے پیش کیے گئے ناموں پر جن ججز نے اتفاق کیا ان میں چیف جسٹس کے علاوہ جسٹس اعجاز الااحسن اور جسٹس سجاد علی شاہ شامل ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *