ایک زرداری سب پربھاری یا ایک زرداری سوبیماری؟

تحریر : آغا خالد

کچھ زیادہ نہیں مردآہن جادوگرکی گزشتہ 15 روز کی سرگرمیاں نوٹ کرلواس کی ملاقاتوں باتوں اور کالز کاریکارڈ دیکھ لوعقل کے اندھوسب سمجھ آجائےگا پھرتخت پنجاب کےلئے پہلے دن سے جاری کھینچا تانی پنگ پانگ کاکھیل ہمارے ملک کی ہمیشہ سےآزادعدلیہ کے وزیراعلی کےانتخاب کےمتعلق فیصلوں اور 17 جولائی کےانتخاب سے مشروط کرناپھرانتخاب سے 15 روز قبل جادوگر کاپنجاب میں قلعہ بند ہونا۔

پھر اس موقع پر اس کے کیس کاخاتمہ، پریس کانفرنس اور ٹکا ٹکا کر ن لیگ اور اس کے قائد نواز شریف پرحملے پھر اچانک 10 ارکان صوبائی اسمبلی کویک دم ن لیگ کی ملک دشمنی اور خان کی حب الوطنی کاالہام ہونا، مگر میں نہ مانوں والوں کاپرنالہ وہیں گرے گا۔

شنید ہے چودھری اور شیخو تک گزشتہ ہفتے 3 ارب پہنچائےگئے کم از کم 30 کروڑ فی رکن اسمبلی کی بولی لگی وفاداریوں کی تبدیلی کے اعلان میں تھوڑی جلدی کرلی گئی ۔ جہاں سے بھانڈا پھوڑا اور ن لیگ کو وقت مل گیا اور اس کی جہاندیدہ قیادت نے بغاوت 4 تک محدود کردی لیکن یہ حتمی نہیں انتخابی ہار کے بعد جنہوں نے پیسے پکڑے ہوئے ہیں وہ کسی بھی وقت دھماکہ کرسکتے ہیں۔

مزید پڑھیں:ایچ ای جے جرنل کلب‘ کے تحت جامعہ کراچی میں سیمینار کا انعقاد

چودھری اور شیخو کس کے بندے ہیں کس کے کہنے پر جادوکی چھڑی گھماتےہیں جن ججز نے گزشتہ دوڈھائی ماہ کےاندراب تک تختہ لاہور کےمتعلق فیصلے دینے یامداخلت کی ان کی کھلی وفاداری ”کن“ سے سمجھی جاتی ہے وغیرہ وغیرہ ۔

اب آتے ہیں سوال نمبر 2 کی طرف ایک باپ کاخواب ہے اس کابیٹا اس کی زندگی میں وزیر اعظم بن جائے جبکہ عددی اعتبار سے ایسا ممکن نہیں اس باپ کے پاس اگلا انتخاب جیتنے کا کوئی مقبول عام بیانیہ بھی نہیں اس کے پاس عوامی حمایت بھی نہیں خدمات کاکوئی ریکارڈ بھی نہیں ایک صوبہ ہے جسے الحمد اللہ 14 سالوں میں اس نےکھنڈر بنادیاہ۔

بری حکومت اور بدعنوانی کی بدترین مثال اس کے ماتھے کا انمٹ داغ ہےتاہم اس کے پاس سازشی نظریہ بہت مضبوط ہے مگر اس کےلیے اسے ہمیشہ طاقت وروں اور ترازوکی مدد درکار رہتی ہے وہ اسے میسرہے یہ کوئی سمجھ میں نہ آنے والی بات نہیں کہ پاکستان میں اقتدار تک پہنچنے کے لیے پنجاب کی سرنگ سے گزرنا پڑتا ہے۔

پنجاب ن لیگ کاقلعہ ہےاسے کمزور کیے بغیروہ اس سرنگ میں سے کیسے گزر سکتا تھا سو اس نے سرنگ میں اپنی جگہ بنالی ہے اگلا الیکشن حیرت انگیز نتائج لاسکتاہے ن لیگ اگلے انتخاب تک اپنی غلطیوں کی اس حدتک اصلاح ضرور کرلےگی کہ ہاربھی ہوئی تو باوقار ہوگی۔

مزید پڑھیں:محکمہ ریلوے میں ‘غیر مصدقہ ملازمین’ کو 35 ارب روپے پینشن دینے کا انکشاف

جادوگر نے مستقبل کی منصوبہ بندی کے تحت ق لیگ کےدونوں دھڑوں کو اپنی دونوں مٹھیوں میں دبوچا ہوا ہے اور اس کےذریعے وہ ہوا میں معلق نتائج پرپتے کھیل سکتاہے پنجاب کےاقتدار کےعوض وفاق کےاقتدار کی امید ہے یہ ضروری نہیں کہ جادوگرکےپاس سارے ہی پتے بادشاہ یارانی کےنکل آئیں گیم 2013/14 کی طرح الٹ بھی سکتی ہے 2012 میں ن لیگ کاپتہ ہمیشہ کےلیے صاف کرنےکی خاطر پاشا منصوبہ شروع ہواتوجادوگر صاحب کوبھی اعتماد میں لیاگیااور انہیں یہ لولی پاپ پورے وثوق سےدیاگیاکہ نئی جماعت کی تخلیق سے ن لیگ پنجاب میں ختم ہو جائے گی۔

جبکہ وہ اور زیادہ مضبوط ہوجائیں گے یہی وجہ تھی کہ جادوگرنے پی ٹی آئی کےجنم کےجلسے جلوسوں کےلیے افرادی قوت کےساتھ مالی مددبھی فراہم کی یہی وجہ تھی کہ نواز شریف کا لاکوٹ پہن کرعدالت عظمی میں پیش ہوگئےتھے اور یہ باتیں اب کوئی سرکای یا غیر سرکاری راز نہیں رہیں۔

ساری سازشیں طشت ازبام ہوچکی ہیں،انسان دھرتی پرجب کوئی جال بچھارہاہوتاہےتو قدرت کی مشنری اپناکام جاری رکھے ہوتی ہے سو بجائے ن لیگ کے پی پی کاپنجاب اور کےپی سے صفایا ہوگیا ہوں۔

مزید پڑھیں:کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہروں میں آج شام تیز بارش کا امکان

چاروں صوبوں کی زنجیرسمٹ کرسندھ تک محدود ہوگئی مگریارلوگ مصر ہیں کہ ایک زرداری سب پہ بھاری حالانکہ ہےجن سے اس کی یاری بنادیاانہوں نےاسے بھکاری، اب بھی جادوگرباز نہیں آیاایک وار اور کرگیااور اس باراس نےن لیگ کوبری طرح گھائل کردیااب دیکھنایہ ہےکہ ن لیگ کیسےسنبھل تی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *