ایم کیو ایم رہنما بابر غوری کو بے گناہ قرار دینے کی پولیس رپورٹ مسترد

انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے ایم کیو ایم کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر بابر غوری کو بے گناہ قرار دینے کی پولیس رپورٹ مسترد کر دی۔

رپورٹ کے مطابق اشتعال انگیز تقریر پر تالیاں بجانے اور سہولت فراہم کرنے کے کیس کی سماعت انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں ہوئی، جہاں پولیس نے ایم کیو ایم رہنما بابر غوری کو بے گناہ قرار دے دیا۔ پولیس نے عدالت میں پیش کرتے ہوئے کہا کہ بابر غوری کے خلاف ٹھوس شواہد نہیں ملے۔

مزید پڑھیں:جے یوآئی سندھ کا اجلاس 14 جولائی کو حیدرآباد میں ہوگا

عدالت نے پولیس رپورٹ مسترد کرتے ہوئے حکم دیا کہ قانون کے مطابق رپورٹ بنا کر لائیں۔ زیرِ دفعہ 497 کے مطابق نہیں زیرِ دفعہ 169 کے تحت رپورٹ بنائی جائے۔ عدالت نے استفسار کیا کہ اگرآپ کو شواہد نہیں ملے اور ملزم کا مقدمے میں نام نہیں تو اسے رہا کیوں نہیں کیا؟۔

عدالت نے تفتیشی افسر کو 20 منٹ میں نئی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا، جس پر پولیس بابر غوری کو بکتر بند گاڑی میں بٹھا کر واپس لے گئی۔ عدالت نے تفتیشی افسر کے نام کی آواز لگوائی لیکن وہاں کوئی موجود نہیں تھا۔ بعد ازاں عدالت نے تفتیشی افسر کو دوبارہ طلب کرلیا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *