لاہور ہائی کورٹ نے حلیم عادل شیخ کی گرفتاری غیرقانونی قرار دیدی، فوری رہا کرنے کا حکم

حلیم عادل شیخ

لاہور ہائی کورٹ نے پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل شیخ کی گرفتاری غیر قانونی قرار دیتے ہوئے فوری رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

لاہور ہائی کورٹ نے سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کی رہائی سے متعلق محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے حلیم عادل شیخ کی گرفتاری کو غیر قانونی قرار دیا اور عدالت نے حلیم عادل شیخ کو فوری رہا کرنے کا حکم دیتے ہوئے 18 جولائی تک ان حفاظتی ضمانت بھی منظور کرلی۔

اب سے کچھ دیر قبل لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی نے سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل شیخ کی رہائی سے متعلق درخواست پر سماعت کرتے ہوئے فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔

جسٹس علی باقر نجفی نے حلیم عادل شیخ کے پرسنل اسسٹنٹ فرحان کی درخواست پر سماعت کی جس میں انہوں نے موقف اختیار کیا کہ حلیم عادل شیخ کو لاہور سے سادہ کپڑوں میں ملبوس افراد نے گزشتہ رات اٹھایا اور پولیس سے رابطہ کرنے کے باوجود نہیں بتایا جا رہا حلیم عادل شیخ کو کہاں رکھا گیا۔

دوران سماعت سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سندھ سے ٹیم آئی جس نے حلیم عادل شیخ کو گرفتار کیا جس پر عدالت نے استفسار کیا کہ ان کے پاس گرفتاری کا کیا اختیار ہے؟ مجھے اس حوالے سے کوئی دستاویز دکھاٸیں۔

سماعت کے دوران جسٹس علی باقر نجفی نے ریمارکس دیے کہ ہمیں کوئی ایسی دستاویز نہیں ملی جس سے گرفتاری قانونی ثابت ہو۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *