بارش کی پہلی بوند گرتے ہی شہر اندھیرے میں ڈوب گیا

شہر قائد میں بارش کے ہوتے ہی مختلف علاقوں میں بجلی کی فراہمی متاثر ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے مختلف علاقوں میں کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش کے بعد موسم خوشگوار ہوگیا تاہم کے الیکٹرک نے گرمی کے ستائے شہریوں سے چند سیکنڈ میں ہی یہ خوشیاں واپس چھین لی اور بارش کی پہلی بوند پڑتے ہی شہر اندھیرے میں ڈوب گیا۔

کراچی کے علاقے گڈاپ، سپر ہائی وے، گلستان جوہر، اسکیم 33، گلشن معمار، سہراب گوٹھ ، سعدی ٹاون، سرجانی ٹاون، تیسر ٹاون اور یوسف گوٹھ کے علاوہ ملیر، قائد آباد، نیو کراچی سمیت مختلف علاقوں میں بارش ہوئی۔

اس کے علاوہ شہر کے دیگر علاقوں میں بھی کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہوئی ، نارتھ کراچی ، نیو کراچی ، نیو ناظم آباد، نارتھ ناظم آباد، ناظم آباد اور سرجانی ٹاؤن میں بھی بارش سے موسم خوشگوار ہوگیا جب کہ شارع فیصل اور ڈیفنس کےعلاقے میں بھی بارش ہوئی۔

دوسری جانب کراچی کے علاقے نارتھ کراچی ، اورنگی ٹاون ، گڈاپ، گلشن اقبال ، فیڈرل بی ایریا ، ناظم آباد ، لیاقت آباد سمیت مختلف علاقوں میں بجلی کی فراہمی متاثر ہوگئی۔

اس کے علاوہ کے الیکٹرک کی جانب سے شہر میں بدترین لوڈشیڈنگ کا سلسلہ بھی جاری ہے اور اس وقت مختلف علاقوں میں 15 گھنٹے سے زائد بجلی بند کی جارہی ہے۔

ذرائع کے مطابق کے الیکٹرک انتظامیہ کی جانب سے عملے کو ہدایت دی گئی ہیں کہ رات 1 بجے سے صبح 6 بجے تک لازمی لوڈشیڈنگ کی جائے اور اس کے علاوہ رات 2 بجے سے 5 بجے شہر کا 80 فیصد علاقے بجلی سے محروم ہوتے ہے۔

زرائع کے الیکٹرک نے کہا کہ گیس مل جائے تو 200 میگاوات بجلی مزید مل سکتی ہے ، کے الیکٹرک وفاقی حکومت اور سندھ حکومت سمیت سیاسی جماعتوں کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے بدترین لوڈشیڈنگ کررہی ہے۔

اس موقع پر کے الیکٹرک کی جانب سے کہا گیا کہ کراچی کے شہری دعا کریں کہ گرمی شدت کم ہوجائے تو لوڈشیڈنگ بھی کم ہوجائیں گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *