ایندھن کی عدم دستیابی کے سبب سری لنکا میں ایک بار پھر اسکولز بند

سری لنکا میں ایندھن کے غیر معمولی بحران کے سبب ملکی وزارت تعلیم نے ایک ہفتے کے لیے تمام سرکاری اور نجی اسکولوں میں چھٹیوں کا اعلان کردیا ہے۔

سری لنکا کے ایک مقامی روزنامہ کے مطابق سری لنکا کی وزارت تعلیم نے اعلان کیا ہے کہ طویل لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے تمام صوبوں کے اہم شہروں میں واقع تمام اسکولوں کو اگلے ہفتے کے دوران بند رکھا جائے گا۔

سری لنکا کی وزارت تعلیم کے سکریٹری نہال رانا سنگھے نے اسکولوں سے آن لائن کلاسز کا انتظام کرنے کے لیے کہا ہے۔ ڈویژنل سطح پر ان اسکولوں میں محدود تعداد میں طلبہ کو آنے کی اجازت ہوگی جہاں طلبہ، اساتذہ اور پرنسپلز کے لیے نقل و حمل کی دشواریاں راہ میں حائل نہ ہوں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ سری لنکا کی عوامی سہولیات کمیشن ہفتے میں کام کے دنوں میں آن لائن ٹیچنگ میں سہولت کے لیے صبح آٹھ بجے سے دن ایک بجے تک لوڈشیڈنگ نہ کرنے کے لیے رضامند ہوگئی ہے۔

یاد رہے، سری لنکا اس سال مارچ سے ہی اپنی تاریخ کے بدترین اقتصادی بحران کے دور سے گزر رہا ہے۔ ملک میں خوراک کی افراطِ زر کی شرح مئی میں 57.4 فیصد تک پہنچ گئی تھی جبکہ خوردنی اشیاء نیز کھانا پکانے، ٹرانسپورٹ اور صنعتوں کے لیے ایندھن کی شدید قلت ہے۔ بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ اب معمول کی بات بن چکی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *