شہریوں کو فراہمی و نکاسی آب کی بہتر سہولیات فراہم کرنا ہماری اولیں ترجیح ہے۔ سید ناصر حسین شاہ

سندھ میں بارش

کراچی () وزیر بلدیات سندھ و چیئرمین کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ سید ناصر حسین شاہ کی زیر صدارت واٹر بورڈ کے اہم پروجیکٹ 65 ایم جی ڈی پروجیکٹ کے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاس ہؤا،

اس موقعے پر سیکریٹری لوکل گورنمنٹ سید نجم شاہ، پروجیکٹ ڈائریکٹر 65 ایم جی ڈی ظفر پلیجو اور دیگر متعلقہ حکام شریک ہوئے۔

مزید پڑھیں: ڈنمارک کے ایک شاپنگ مال میں مسلح شخص کی فائرنگ، 3 افراد ہلاک

اجلاس کے موقعے پر پروجیکٹ ڈائریکٹر 65 ایم جی ڈی نے وزیر بلدیات سندھ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ دریائے سندھ سے کراچی کا پانی کوٹہ 650 ایم جی ڈی مختص ہے، جس میں سے 500 ایم جی ڈی واٹر بورڈ، 20 ایم جی ڈی پورٹ قاسم اور اسٹیل مل ڈرا کر رہا ہے، جبکہ 130 ایم جی ڈی کوٹہ ابھی باقی ہے، جس کی وجہ سے 65 ایم جی ڈی پروجیکٹ شروع کیا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ 65 ایم جی ڈی پروجیکٹ کے 3 پیکجز ہے، پیکج ون میں آر ڈی 88 سے باء گریوٹی پانی پمپنگ اسٹیشن تک لایا جائے گا، جسکا کام این۔ایل سی کو دیا گیا ہے، جس پر 30 فیصد کام مکمل ہوا ہے۔

پیکج ٹو کا ٹینڈڑ ایوارڈ کرنا ہے اور پیکج تھری گھارو پمپنگ اسٹیشن سے ھاء پوائنٹ تک پانی لایا جائے، جس میں 11 کلومیٹر کی 72 انچ ڈایا ایم ایس لائن ڈالی جائے گی جس میں 2 کلومیٹر لائن ڈالی گئی ہے اور مین ریلوے لائن کراسنگ بھی کی گئی ہے، جسکا کام حاجی سراج الدین سومرو کی دیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: فیصل آباد ، ہسپتال کے سیکیورٹی گارڈ نے خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

انہوں نے مزید کہا کہ اس پروجیکٹ کے تکمیل کے لئے سندھ حکومت نے روائیز پی۔سی ون میں 9146 ملین منظور کیے ہے جبکہ 1150 ملین اس بجٹ میں رکھے گئے ہیں۔

اس موقعے پر پروجیکٹ کے ٹھیکیدار کمپنی نے وزیر بلدیات سندھ سے گزارش کرتے ہوئے کہا کہ مھنگائی تناسب سے پروجیکٹ کے اخراجات 100 فیصد بڑھ گئے ہیں جس پر نظر ثانی کی جائے، جس پر وزیر بلدیات سندھ نے کہا کہ رولز کو مدنظر رکھتے ہوئے فنڈز جاری کیے جائیں گے دوسری صورت میں ٹینڈڑ کینسل کیا جائے گا۔

اس موقعے پر وزیر بلدیات سندھ کا کہنا تھا کہ 65 ایم جی ڈی منصوبہ فوری طور پر مکمل کیا جائے کیونکہ شہریوں کو فراہمی و نکاسی آب بہتر سہولیات فراہم کرنا ہماری اولیں ترجیح میں شامل ہے، انکا مزید کہنا تھا کہ پانی کے تمام پروجیکٹ کے تکمیل کے لیے سندھ حکومت تمام فنڈز جاری کریگی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *