بی جے پی ترجمان کی شان اقدسﷺ میں گستاخی، مسلمانوں نے مقدمہ درج کروادیا

بے جے پی ترجمان

خاتم النبیین حضرت محمدﷺ کی شان میں گستاخی کرنے والی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی ترجمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ 

بھارت میں مسلمانوں کی مذہبی آزادی خطرے سے دوچار ہے جس کی حالیہ مثال بی جے پی بدبخت ترجمان کی جانب سے سرورِ کائنات حضرت محمدﷺ کی شان اقدس میں کی گئی گستاخی ہے۔

نیشنل ٹیلی ویژن ٹائمز ناؤ پر نوپور شرما نے گفتگو کے دوران نئی آخرالزمان حضرت محمدﷺ کی شان میں گستاخی کی۔ تاہم بعد میں چینل نے اس واقعے سے کنارہ کشی اختیار کرلی۔

 مسلم جماعت رضا اکیڈمی کی جانب سے نورپور کے خلاف مذہبی اشتعال انگیزی کو ہوا دینے، مختلف گروہوں کے درمیان دشنی کو فروغ دینے اور ریاست کے خلاف سنگین جرم کرنے کی پاداش میں مقدمہ درج کروادیا گیا ہے۔

الٹ نیوز کے نام سے ایک چینل نے جب نوپور شرما کے سوشل میڈیا کمنٹس پر مشتمل ایک ویڈیو شیئر کی تو اس پر بی جے پی ترجمان نے کہا کہ ان کی ریپ اور جان سے مار دینے کی دھمکیاں مل رہی ہیں۔

بات یہیں ختم نہیں ہوتی، بلکہ خاتون ترجمان نے الزام عائد کیا کہ الٹ نیوز کے مالک محمد زبیر ہی انہیں ملنے والی دھمکیوں کے ذمہ دار ہیں۔

بعدازاں جب عوام نے ان کی بات پر کان نہ دھرے تو انہوں نے مذہبی منافرت پھیلانے کے لیے شان اقدس میں گستاخی کرکے سنگین ترین اقدام کیا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *