پی ٹی آئی رہنما سے ملے اسلحے کی حقیقت کیا؟ اہم شخصیات کے بیان میں تضاد

تحریک انصاف اور اسلحہ

لاہور میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے مرکزی رہنما سے پولیس نے اسلحہ برآمد کیا ہے، تاہم اسی سے متعلق اہم شخصیات کے بیان میں تضاد بھی سامنے آگیا۔ 

سوشل میڈیا پر زیرگردش تصاویر سے متعلق بتایا جارہا ہے کہ یہ لاہور میں تحریک انصاف کے رہنما کے پاس سے مبینہ طور پر اسلحہ ملا، جبکہ جس جگہ سے اسلحہ ملا وہاں کوئی گرفتاری بھی عمل میں نہیں آسکی۔

اس اسلحے سے متعلق مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے سوشل میڈیا پر ایک پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے اس اسلحے کی برآمدگی سے متعلق بتایا۔

تصاویر شیئر کرنے کے ساتھ مریم نے تحریر کیا کہ پنجاب پولیس نے پی ٹی آئی لاہور کے مرکزی رہنما زبیر نیازی اور باجاش نیازی کی گاڑیوں سے اسلحہ برآمد کیا ہے جبکہ مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے۔

مریم نواز نے لکھا کہ یہی پی ٹی آئی لانگ مارچ کا ایک بھیانک چہرہ ہے، اور یہی ان کے ارادے ہیں۔

ن لیگی رہنما کے اس پیغام کی نفی نامور صحافی حامد میر نے اپنے پیغام میں کردی، جس کے مطابق یہ اسلحہ گاڑی سے نہیں بلکہ گھر سے ملا ہے۔

حامد میر نے سوشل میڈیا پر اپنے پیغام میں اسی اسلحے کی تصویر شیئر کی اور لکھا کہ لاہور پولیس نے یہ اسلحہ آج ایک سیاسی جماعت کے رہنما کے گھر سے برآمد کیا ہے۔

انہوں نے یہ بھی تحریر کیا کہ یہ اسلحہ کہاں سے آیا اور کس لیے اکٹھا کیا گیا؟ لاہور پولیس کو تفصیلات بتانی چاہئیں۔

واضح رہے کہ حامد میر نے اپنے پیغام میں یہ نہیں بتایا کہ یہ اسلحہ آخر کس جماعت کے رہنما کے گھر سے برآمد کیا گیا ہے؟ جس کی وجہ سے واقعے پر شکوک و شبہات کا اظہار کیا جارہا ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *