درآمدی اشیاء پر پابندی سے لاکھوں لوگ بے روزگار ہوجائیں گے، الیاس میمن

کراچی (پریس ریلیز ) آل کراچی انجمن تاجران کے چیئرمین اور طارق روڈ ٹریڈرز الائنس کے صدر الیاس میمن نے کہا ہے کہ ۔ حکومت کی جانب سے امپورٹڈ اشیاء پر پابندی کا فیصلہ کسی صورت میں درست نہیں اس فیصلے سے لاکھوں لوگ متاثر ہونگے گزشتہ روز میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے۔

مزید پڑھیں: کوریا ، پاکستان کے مابین دوطرفہ تجارتی تعلقات فروغ دینے کا خواہ، سوسانگ پیو

انہوں نے کہا کہ بدقسمتی کی بات ہے کہ مادر وطن کو تباہی سے بچانے کا کوئی حل نکالنے کے بجائے سیاسی جماعتیں الزام تراشی اور پوائنٹ سکورنگ میں مصروف ہیں جونہ تو ان کے حق میں ہے اور ہی ملک کے مفاد میں ہے۔ معیشت کو بچانے کے لیے ہنگامی بنیادوں پر جرات مندانہ فیصلے کرنا وقت کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی لڑائی کے بجائے سیاسی جماعتوں کو مشترکہ طور پر ’چارٹر آف اکانومی‘ کو اتفاق رائے سے تیار کرناہوگا جس کا کراچی چیمبر طویل عرصے سے مطالبہ کر رہا ہے۔ سیاسی اختلافات سے قطع نظر، مذکورہ چارٹر آف اکانومی کے تحت جن اقتصادی پالیسیوں پر ایک بار اتفاق کیا گیا ہو اور ان پر عمل درآمد بھی کردیا گیا ہو انہیں برقرار رہنا چاہیے ۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب میں 19 سالہ لڑکی لڑکا بن گئی

جہاں تک معیشت کا تعلق ہے تمام سیاسی جماعتوں کو ایک صفحے پر رہنا چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیاست کے بجائے معیشت کو کسی بھی قیمت پر ملک کی قیادت کرنی ہوگی اس لیے تمام سیاسی جماعتوں کو صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور وہ اقدام اٹھانا چاہیے جو پاکستان اور اس کی معیشت کے حق میں ہوں۔

انہوں نے آئی ایم ایف کے ساتھ گفت و شنید میں طے شدہ حکمت وعملی اور ٹارگٹڈ سبسڈیز کو عام کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا کیونکہ کاروباری برادری کے رہنماؤں کو خدشہ ہے کہ یہ بوجھ عام آدمی اور دیانت دار ٹیکس دہندگان پر پڑے گا انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف کی جانب سے سولر سسٹم پر جنرل سیلز ٹیکس ختم کرنے کا اعلان اچھا فیصلہ ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *