ایف پی سی سی آئی،سندھ وومن کمیشن اور فرسٹ وومن بینک کا خواتین کی آگاہی کے لیے مشترکہ کام کرنے پر اتفاق

کراچی: فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری(ایف پی سی سی آئی) کی قائمہ کمیٹی برائے وومن انٹرپرینور کمیٹی کی کنوینر، ایف پی سی سی آئی کی سابق نائب صدر اورکے ڈبلیوسی سی آئی کی بانی صدر نازلی عابد نثار نے کہاہے کہ خواتین کو آگے بڑھنے کے زیادہ سے زیادہ موقع دینے اور انہیں حقوق کے بارے میں آگاہی فراہم کرنے کے لیے ایف پی سی سی آئی، سندھ کمیشن برائے خواتین اور فرسٹ وومن بینک مشترکہ طور پر کام کریں گے۔

اس ضمن میں خواتین کو حقوق پر آگاہی سیشن منعقد کیے جائیں گے اور خواتین کو درپیش مسائل بالخصوص کاروبار کرنے میں آسانیاں پیدا کرنے نیز وراثت میں انہیں جائز حق دلوانے کے لیے بھرپور معاونت کی جائے گی۔یہ بات انہوں نے ایف پی سی سی آئی میں وومن انٹرپرینور کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

مزید پڑھیں: پی ٹی آئی کے منحرف ارکان ڈی سیٹ، حمزہ کے اقتدار کا سورج غروب

اجلاس میں فیڈریشن کی نائب صدررفعت ملک، نائب صدور سلیمان چاؤلہ، شبیر منشاء چھرہ، وومن انٹرپرینور کمیٹی کی کنوینر، ایف پی سی سی آئی کی سابق نائب صدر، کراچی ویمن چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ملیر (کے ڈبلیوسی سی آئی)کی بانی صدر نازلی عابد نثار، ڈپٹی کنوینر فرح صادق خان، ممبر سندھ کمیشن برائے خواتین درخشاں صالح، سینئر نائب صدر فرسٹ وومن بینک شاہین ضمیر، فیمپرو کی سی ای او نادیہ پٹیل گانجی، چیئرپرسن نیشنل بزنس کونسل حنا منصب، مہرین الہیٰ کے علاوہ خواتین تاجروں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

نازلی عابد نثار کا کہنا تھاایف پی سی سی آئی خواتین کے مسائل اجاگر کرنے اور ان کے حقوق کے لیے کوشاں ہے۔ خواتین کو ہر شعبے میں کاروباری مواقع ملنے چاہیے خاص طور پر زراعت، فشریز وغیرہ قابل ذکر ہیں۔انہوں نے کہا کہ اندورن سندھ گھروں سے کام کرنے والی خواتین کی مہارت لاجواب ہے مگر ان کو ان کا جائز حق نہیں ملتا لہٰذا اب وقت آگیا ہے کہ سب کو یکساں کاروباری مواقع اور فوائد پہنچائے جائیں۔انہوں نے تجویز دی کہ فیڈریشن میں خواتین ون ونڈو سہولت فراہم کی جائے جہاں 24محکموں کے نمائندے موجود ہوں تاکہ خواتین تاجروں کو ادھراُدھر نہ جانا پڑ ے۔

ایف پی سی سی آئی کی نائب صدررفعت ملک نے خواتین تاجروں پر زور دیا کہ وہ تجارت وصنعت کے شعبوں میں آگے آئیں۔ انہوں نے کہاکہ خواتین تاجروں کے لیے بینکوں سے آسان شرائط پر قرضوں کی فراہمی یقینی بنایا جائے۔چیئرپرسن نیشنل بزنس کونسل حنا منصب نے تمام ویمن چیمبرز کو متحد ہوکر کام کرنے پر زوردیتے ہوئے کہا کہ خواتین کی ترقی کے لیے کام کرنے کے لیے کسی عہدے کی ضرورت نہیں ہوتی اور اس حوالے سے ایف پی سی سی آئی کی سابق نائب صدر نازلی عابدنثار کی مثال ہمارے سامنے ہے۔

مزید پڑھیں: عامر لیاقت کو چاہیے بشریٰ کے پیروں میں گر کر معافی مانگے، لبنیٰ فریاد

سندھ کمیشن برائے خواتین کی رکن درخشاں صالح نے کہا کہ خواتین کے مسائل حل کرنے میں سندھ کمیشن فعال کردار ادا کررہاہے جس میں وراثت میں خواتین کا جائز حق دلوانے میں کردار انتہائی اہم ہے کیونکہ وراثت کے مسائل ہوں یا کوئی قانونی مشاورت، سندھ کمیشن برائے خواتین نے ایک ہیلپ لائن نمبر مختص کیا ہے جہاں خواتین کال کرکے باآسانی قانونی مدد طلب کرسکتی ہیں اس حوالے سے قانونی ٹیم ان کی بھرپور مدد کرے گی۔

فرسٹ وومن بینک کی سینئر نائب صدر شاہین ضمیر نے کہا کہ ان کا بینک خواتین کے اعتماد کا مظہر ہے جہاں خواتین کو ترجیحی بنیادوں پر قرضوں کی حصول میں ہرممکن سہولیات فراہم کی جاتی ہے نیز خواتین تاجروں کی حوصلہ افزائی اور رہنمائی بھی بینک کی اولین ترجیحات میں شامل ہیں۔انہوں نے ایف پی سی سی آئی کی قائمہ کمیٹی کے ساتھ مشترکہ طور پر خواتین کے لیے آگاہی سیشن کے انعقاد میں بھی دلچسپی ظاہر کی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *