پٹیل پاڑہ میں عوام نے ایس ایچ اوز سمیت پولیس اہلکاروں کی درگت بنا دی

پٹیل پاڑہ میں چھاپے کے دوران ایس ایچ اوز سمیت پولیس اہلکاروں کی پٹائی

کراچی: حیدری مارکیٹ تھانے اور عزیز آباد تھانے کے ایس ایچ او کی پولیس اہلکاروں سمیت پٹیل پاڑہ کے علاقے میں پٹائی کی گئی ہے۔ دو اہلکار شدید زخمی آغا خان منتقل کردیئے گئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق حیدری تھانے کے ایس ایچ او اور عزیزہ آباد تھانے کے ایس ایچ او نے بغیر اطلاع کے تھانے جمشید ٹاون کی حدود میں پٹیل پاڑہ کے علاقے میں غیر قانونی چھاپا مارنے کی کوشش کی، جہاں پر موجود علاقے کے لوگوں نے ڈکیٹ سمجھ کر دونوں تھانے کے ایس ایچ اوز اور سادہ لباس پولیس کو پکڑ کر بدترین تشدد نشانہ بنایا اور 15 کی اطلاع پر پولیس پہنچی۔

علاقہ ایس ایچ او تھانے جمشید ٹاون نے دیکھا کے یہ پولیس افسر ایس ایچ او فرخ ہاشمی اور ایس ایچ او فیصل رفیق اور ساتھ پولیس اہلکار تھے جو شدید زخمی حالت میں تھے جن کو فوری طور پر آغا خان منتقل کیا۔

جبکہ چھاپہ مار ٹیم کے من پسند اہلکاروں اور دونوں ایس ایچ او صاحبان اس واقع کو ڈکیٹی کا رنگ دینے کی کوشش کرتے رہے اور ایس ایچ او جمشید کوارٹر اس واقع کی غلط ایف آئی آر کاٹنے سے گریز کرتے رہے۔

پولیس افسران کو بغیر بتائے ایس ایچ او جمشید کوارٹر نے بلآخر ڈکیتی کا مقدمہ درج کیا، جس کی ایف آئی آر نمبر 285/22بہجرم دفعہ395/353/324/186/34 درج کی، جبکہ پولیس آنے ان سب واقع کو چھپانے کے لیے کسی کو کانوں کان خبر نہیں ہونے دی اور زخمی پولیس اہلکاروں کو بجائے سرکاری ہسپتال کے آن کو آغا خان منتقل کیا۔

پولیس کے مطابق ہم نے اعلی پولیس افسران کے حکم پر چھاپا مارا تھا جب کہ اب تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی جب پولیس سے مؤقف لیا تو بتایا کہ ہم کسی مفرور ملزمان کی تلاش میں گے تھے، جس علاقے کے لوگوں نے بدترین تشدد کا نشانہ بنایا، جبکہ ایس ایچ او جمشید ٹاؤن نے پولیس کو بچاتے ہوئے ڈکیٹی ایف آئی آر کا اندراج کیا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *