شیخو پورہ، فائرنگ سے تحریک لبیک کا نوجوان کارکن ہلاک

شیخو پورہ : ضلع شیخو پورہ کے گاؤں باہو مان میں چند شر پسند عناصر نے نوجوان کو فائرنگ کرکے قتل کردیا۔ مقتول کا تعلق تحریک لبیک سے تھا، واقع کی ایف آئی آر درج کرنے کے بعد قاتلوں کی تلاش جاری۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ زین علی نامی شخص کا تعلق سیاسی جماعت تحریک لبیک سے تھا، جس نے گزشتہ روز نماز فجر کی بعد ختم نبوت کا نعرہ بلند کیا تھا۔ جس کے نتیجے میں اسے قادیانیوں کی جانب سے فائرنگ کا نشانہ بناکر قتل کر دیا گیا۔

مزید پڑھیں: انسانی زندگی کے چند اہم طبی نمبرز

واقعے کی اطلاع ملتے ہی تحریک لبیک کے مرکزی امیر حافظ سعد رضوی اور تحریک لبیک کے مرکزی نائب امیر پیر سید ظہیرالحسن شاہ بخاری شیخوپورہ پہنچ گئے، ایف آئی آر درج کرادی گئی ۔

ان کا کہنا ہے کہ قاتلوں کو لبرل سیاسی جماعتوں اور حکومت کی پشت پناہی حاصل ہے۔ قتل کے کثیر عینی شاہدین موجود ہونے کے باوجود ملزمان تاحال گرفتار نہیں ہوئے سکے۔

واضح رہے کہ قادیانیوں کی جانب سے نے باہو مان میں گاوں میں ختم نبوت کا نعرہ بلند کرنے کی ممانعت ہے۔

مزید پڑھیں: وفاقی حکومت کا سرکاری دفاتر میں ہفتہ کی چھٹی بحال نہ کرنے کا فیصلہ

ذرائع کے مطابق ایف آئی آر میں نامزد ملزمان کو برطانیہ فرار کرانے کی تیاریاں شروع کی جاچکی ہیں۔ جب کہ ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس مقتول کے لواحقین پر صلح نامہ کرنے کے لیے بھی پریشر ڈال رہی ہے۔

حکومت کو چاہیئے کہ قانون کی حکمرانی قائم کرتے ہوئے مظلوم کو انصاف دلائے اور حکومت پر لازم ہے کہ قادیانیوں کی غلامی کو بھی absolutely not کہے اور قاتلوں کو پھانسی پر چڑھائے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *