لاہور ہائیکورٹ کا اسپیکر قومی اسمبلی کو وزیراعلیٰ پنجاب سے حلف لینے کا حکم

لاہور ہائیکورٹ
لاہور ہائی کورٹ نے اسپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف کو  نو منتخب وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز سے حلف لینے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ اسپیکر قومی اسمبلی 30 اپریل کو صبح ساڑھے گیارہ بجے حمزہ شہباز سے حلف لیں۔
لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس جواد حسن نے حمزہ شہباز کی حلف برادری کے لیے دائر کی جانے والی تیسری درخواست پر محفوظ کیے جانے والا فیصلہ سنایا۔
نو منتخب وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہبازکی حلف لینے کی تیسری درخواست پر لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس جواد حسن نے فیصلہ سناتے ہوئے اسپیکر قومی اسمبلی کو حمزہ شہباز سے حلف لینے کا حکم دیا۔ جسٹس جواد حسن نے 9 صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کیا۔
اس سے قبل لاہور ہائیکورٹ میں حمزہ شہباز کی حلف لینے کیلئے تیسری بار دائر درخواست پر سماعت جسٹس جواد حسن سماعت نے کی۔ حمزہ شہباز کی درخواست میں وزارت قانون و انصاف اور پنجاب حکومت کو فریق بنایا گیا تھا۔
حمزہ شہباز نے درخواست میں مؤقف اپنایا کہ صدر مملکت کا تعلق ایک سیاسی جماعت سے ہے باوجود اس کے وہ بطور سربراہ کسی سیاسی دباؤ کے بغیر اپنے فرائض پر عمل کرنے کے پابند ہیں۔ درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا کہ معزز عدالت ان کے حلف کا حکم دے چکی ہے اور گورنر پنجاب عدالتی حکم کی تعمیل نہیں کر رہے۔

خیال رہے کہ حمزہ شہباز نے حلف کیلئے پہلی پٹیشن 22 اپریل کو دائر کی تھی، کیس کی سماعت چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس امیر بھٹی نے کی تھی اور صدر کو حکم دیا کہ وہ خود حلف لیں یا حلف کیلئے کوئی نمائندہ مقرر کریں۔

بعد ازاں حمزہ شہباز نے حلف کیلئے دوسری پٹیشن 27 اپریل کو دائر کی جس میں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے حکم دیا کہ 28 اپریل کو رات 12 بجے سے پہلے گورنر  پنجاب حمزہ شہباز سے لازمی حلف لیں یا کوئی نمائندہ مقرر کریں۔
Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *