میٹرک و انٹر بورڈ میں تعینات OPS افسران کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہ

کراچی : انسانی حقوق کی ایک غیر سرکاری تنظیم نے سندھ کے تعلیمی بورڈز کی زبوں حالی کے اصل زمہ داران اوپی ایس اور ایکس کیڈر کے افسران جو کہ غیر قانونی طور پر سیکریٹری اور ناظم امتحانات کے عہدوں پر براجمان ہیں کے خلاف عدالت سےرجوع کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ۔

اس سلسلے میں پیٹیشن تیار کر لی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ان نا اہل افسران کی وجہ سے سندھ میں تعلیمی بورڈز کا نظام تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا ہے جس کے لئیے ضروری ہے کہ ان کی جگہ اہل اور قابل افسران کی تعیناتی عمل میں لائی جائے تاکہ صوبے کے لاکھوں بچوں کا مستقبل محفوظ ہو۔

مزید پڑھیں: رمضان المبارک امت مسلمہ پر رب کے احسان کا مہینہ ہے، سمیع الحق سواتی

آئینی درخواست میں لکھا گیا ہے کہ سن 2000 کے پہلی دہائی میں سفارشی طور پر اعلی عہدوں پر فائز ہونے والے افسران نے جو روایت ڈالی تھی اس کا تسلسل ابھی تک جاری ہے اور جس کی وجہ سے نظام میں مذید تباہی پھیل رہی ہے ۔

عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ ان غیر قانونی طور پر تعینات افسران کو ہٹا کر ایک صاف و شفاف طریقے سے اہل و قابل افسران کو تعینات کیا جائے تاکہ لاکھوں بچوں کا مستقبل محفوظ ہو ۔زرائع کے مطابق پیٹیشن عید کی چھٹیوں کے بعد داخل کر دی جائے گی ۔ جس میں ماہرین تعلیم سے مشاورت کی گئی ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *